مولانا فضل الرحمان نے حکومت سے مذاکرات کی سختی سے تردید کر دی

مولانا فضل الرحمان نے حکومت سے مذاکرات کی سختی سے تردید کر دی
Image Source: File Photo

پشارو:  مولانا فضل الرحمان نے حکومت سے مذاکرات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ عبد الغفور حیدری کی سربراہی میں کوئی مذاکرات نہیں ہورہے۔


 

تفصیلات کے مطابق، جے یو آئی (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اے این پی کے صوبائی صدرایمل ولی خان سے ٹیلیفونک رابطہ کر کے بتایا کہ حکومت سے کوئی مذاکرات نہیں ہورہے، مذاکرات کے حوالے سے حکومت غلط فہمیاں پیدا کررہی ہے۔

 

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ مذاکرات کے حوالے سے کوئی بھی فیصلہ رہبر کمیٹی کرے گی جب کہ ایمل خان نےکہا کہ اے این پی کو اس سے کوئی سروکار نہیں کہ مذاکرات کے حوالے سے کوئی جو بھی پروپیگنڈا کررہا ہو ہماری جماعت اسفندیار ولی خان کےحکم کے مطابق آزادی مارچ میں شرکت کرے گی۔

 

ایمل ولی خان نے کہا کہ  تمام صوبائی تنظیموں کا اس وقت فوکس آزادی مارچ ہے اور اے این پی اپنی تیاریوں کو آخری شکل دے رہی ہے۔

 

یادرہے کہ مولانا فضل الرحمان نے آزادی مارچ کے حوالے سے مذاکرات کا اختیار رہبر کمیٹی کو دے دیا تھا جس کے بعد حکومتی کمیٹی اور جے یو آئی کے درمیان آج ہونے والے مذاکرات ملتوی کر دیے گئے تھے ۔