جان کو خطرہ ہے ، سکیورٹی بڑھائی جائے ، ڈاکٹر عاصم

جان کو خطرہ ہے ، سکیورٹی بڑھائی جائے ، ڈاکٹر عاصم

کراچی: سابق صدر مملکت کے قریبی دوست اور پی پی رہنما ڈاکٹر عاصم حسین کی مدعیت میں بوٹ بیسن پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کرا دیا گیا۔مقدمہ نامعلوم افراد کیخلاف درج کرایا گیا۔جس میں ڈاکٹر عاصم نے موقف اختیار کیا کہ ان کی جان کو خطرہ ہے ۔ڈاکٹر عاصم کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز کلفٹن ضیاءالدین اسپتال سے وکیل سے ملنے کلفٹن تین تلوار جا رہا تھا کہ میری گاڑی جیسے ہی بوٹ بیسن چورنگی کی طرف بڑھی تو پیچھے سے سفید رنگ کی ڈبل کیبن جیپ میری سائڈ پر آئی.جس میں ایک شخص نے پستول دکھائی ۔مجھے ایسے لگا کہ یہ شخص مجھے گولی مارنے لگا ہے۔


ڈاکٹر عاصم کی جانب سے درج ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ مسلح افراد کو دیکھ کر میں خوفزدہ ہوگیا اور ڈرائیور کو رفتار بڑھانے کےلیے کہا جب کہ اسی دوران میرا سیکیورٹی اسکارٹ بھی پیچھے سے آگیا.جس کی وجہ سے دونوں گاڑیاں پنجاب چورنگی کی طرف چلی گئیں، میری جان کو خطرہ ہے لہذا سیکیورٹی میں اضافہ کیا جائے۔