تارکین وطن کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا ضروری ہے : ممنون حسین

تارکین وطن کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا ضروری ہے : ممنون حسین

اسلام آباد:صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ بیرون ملک 90 لاکھ پاکستانیوں کی فلاح و بہبود اہم ذمہ داری ہے اورتارکین وطن کے مسائل ترجیحی بنیاد وں پر حل کرنا ضروری ہیں۔


ایک انٹرویو میں صدر ممنو ن حسین نے کہا کہ اوور سیز پاکستانیز فانڈیشن کا ایک اہم مقصد بیرون ملک پاکستانیوں کی اور پاکستان میں ان کے خاندان کی فلاح و بہبود ہونی چاہیے، توقع ہے کہ او پی ایف اپنا کردار بہتر طریقے سے ادا کرتی رہے گی۔انھوں نے بیرون ملک پاکستانیوں کی تعداد میں کمی کے رحجان پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کے ہنر مند اور غیر ہنر مند کارکنان کو بیرون ملک روزگار دلانے کے نئے طریقوں پر غور کرنے کی ضرورت ہے۔

صدر مملکت نے کہا کہ اوپی ایف بیرون ملک پاکستانیوں کے سفارت خانو ں کے ساتھ روابط میں مزید اضافہ کرے تاکہ ان کے مسائل زیادہ سے زیادہ حل کیے جاسکیں،اس کے لیے ضروری ہے کہ سفارت خانوں میں کمیونٹی ویلفیئر آفیسر کی کارکردگی بہتر بنائی جائے۔صدر ممنون حسین نے مزیدکہا ہے کہ بیرون ملک پاکستانیوں کے بچوں کے پاکستانی تعلیمی اداروں میں داخلے کے لیے کوٹے کے تعین کے لیے کام کیا جائے اور عرب ممالک میں پاکستانی اسکولوں کے قیام کے لیے سنجیدگی سے کام کیا جائے تاکہ عرب ممالک میں کام کرنے والے پاکستانیوں کے بچوں کے لیے سستی تعلیم کی فراہمی ممکن ہو سکے ۔