مردہ زندہ ہوگیا,بھارتی شہر دروات میں سترہ سالہ لڑکا اپنے جنازے میں اٹھ بیٹھا

مردہ زندہ ہوگیا,بھارتی شہر دروات میں سترہ سالہ لڑکا اپنے جنازے میں اٹھ بیٹھا

مردہ زندہ ہوگیا,بھارتی شہر دروات میں سترہ سالہ لڑکا اپنے جنازے میں اٹھ بیٹھا

 کرناٹک : بھارتی شہر دروات میں سترہ سالہ لڑکا اپنے جنازے میں اٹھ بیٹھا۔بھارتی ذرائع ابلاغ پر جاری رپورٹس کے مطابق بھارتی ریاست کرناٹک میں مردہ سمجھے جانے والے سترہ سالہ لڑکے کو آخری رسومات کی ادائیگی کیلئے لے کر جایا جا رہا تھا کہ دوران سفر وہ اٹھا بیٹھا۔یہ منظر دیکھ کر قریب موجود افراد خوف کے مارے چیختے ہوئے بھاگ گئے، جب کہ کئی افراد بے ہوش ہو کر گر پڑے۔


سترہ سالہ کمار ماریواد کو کچھ روز قبل پاگل کتے کے کاٹنے پر تشویش ناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا تھا، جس کے بعد تیز بخار کے باعث کمار کو ایک ہفتے تک اسپتال کے وینٹی لیٹر پر رکھا گیا۔ ڈاکٹرز نے کمار کے اہل خانہ کو بتا دیا تھا کہ ایسی حالت میں وہ زیادہ روز نہیں جی پائے گا۔کمار کو وینٹی لیٹر سے ہٹا دیا گیا، جس کے بعد اس کی حالت مزید خراب ہوگئی، وائرس پورے جسم پر پھیلنے کے باعث کمار کی حالت اتنی خراب ہو گئی کہ اس کے گھر والے سمجھ بیٹھے کہ وہ مر گیا ہے۔

  کمار نے نویں جماعت تک تعلیم حاصل کرسکا،پسماندہ گھریلو حالات کے باعث کمار نویں سے آگے تعلیم جاری نہ رکھ سکا اور ماں باپ کا ہاتھ بٹانے کیلئے مقامی فیکٹری میں مزدور کی حیثیت سے کام کرنے لگا۔

کمار کا ایک بڑا بھائی بھی ہے، جو جسمانی طور پر معذور ہے، کمار کے والدین نے بڑے بھائی کے علاج میں تعاون کیلئے حکومت سے مدد کی اپیل کی ہے۔