دبئی نے ہوٹلوں اور ریستورانوں پر پھر پابندی عائد کر دی

دبئی نے ہوٹلوں اور ریستورانوں پر پھر پابندی عائد کر دی
کیپشن:   دبئی نے ہوٹلوں اور ریستورانوں پر پھر پابندی عائد کر دی سورس:   فائل فوٹو

ابوظہبی: دبئی کے ہوٹلوں اور ریستورانوں میں تفریحی سرگرمیوں پرعارضی طور پر پابندی لگ گئی ہے۔ دبئی میں سیاحت اور کامرس مارکیٹنگ کے محکمے دبئی ٹور ازم نے امارت دبئی کے ہوٹلوں اور ریستورانوں میں تفریحی سرگرمیوں کو عارضی طور پر روک دینے کا اعلان کیا ہے۔ یہ فیصلہ جمعرات 21 جنوری سے تا حکمِ ثانی نافذ العمل ہو گا۔

محکمے کی جانب سے کہا گیا ہے کہ یہ فیصلہ سیاحت کے سیکٹر سے متعلق تمام شعبوں میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے احتیاطی اقدامات اور حفاظتی تدابیر کو یقینی بنانے کے سلسلے میں کیا گیا ہے۔

محکمے کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں واضح کیا گیا کہ زمینی تفتیش اور معائنوں میں بات سامنے آئی کہ تفریحی سرگرمیوں کے دوران خلاف ورزیوں میں اضافہ ہو رہا ہے۔

محکمے کا کہنا ہے کہ وہ شعبہ صحت کے حکام کے ساتھ مل کر صورت حال کا مسلسل جائزہ لے رہا ہے۔ ان تمام کوششوں کا مقصد معاشرے کی حفاظت اور صحت و سلامتی کو یقینی بنانا ہے۔

خیال رہے کہ متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان امن معاہدے کے بعد تعلقات میں بہت تیزی سے اضافہ ہوا ہے جس کے بعد تجارت، تعلیم، سائنس اور سیاحت کے شعبوں میں بھی تعاون بہت تیزی سے آگے بڑھ رہا ہے۔ دونوں ممالک نے دوستی کو مزید بڑھاوا دینے کے لیے ایک دوسرے کے شہریوں کے لیے ویزہ فری انٹری کا بھی اعلان کر دیا تھا۔ جس کے بعد ویزہ لینے کی ضرورت ختم ہو گئی تھی۔ تاہم امارات نے گزشتہ دنوں اسرائیل سے طے پانے والے ویزہ فری معاہدے کو معطل کر دیا ہے۔