"عوام اپنے ووٹ کی قوت سے ملک میں نظام مصطفیﷺ کے نفاذ کا راستہ ہموار کر سکتی ہے"

فوٹو بشکریہ فیس بک

مانسہرہ: متحدہ مجلس عمل کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ عوام اپنے ووٹ کی قوت سے ملک میں نظام مصطفیﷺ کے نفاذ کا راستہ ہموار کر سکتی ہے۔

مانسہرہ میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ عظیم الشان جلسہ ایم ایم اے کی کامیابی کی ایک نوید ہے، عوام کا ووٹ پورے ملک کے نظام کو تبدیل کر سکتا ہے۔ آج کی جنگ ووٹ کی پرچی سے ہوتی ہے، پوری قوم نے اپنے وطن کیلئے نئی قیادت کا انتخاب کرنا ہے۔ آج ملک میں حق و باطل کے درمیان جنگ ہے، تمام دینی جماعتیں ایک پلیٹ فارم پر جمع ہیں جن قوتوں نے ملک کو ستر سالوں میں امن نہیں دیا ، ان ناکام لوگوں کو مزید حکومت کرنے کا کوئی حق نہیں، عوام اپنے ووٹ سے سیاسی بساط تبدیل کر سکتے ہیں، جماعتوں کی شناخت ان کا منشور اور کردار ہوتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قیام پاکستان سے اب تک دین بے زار قوتیں ملکی اقتدار پر قابض ہیں، ہم نے نظریاتی لحاظ سے قوم کی ترجمانی کی، قوم کے لیے آزمائش ہے کہ ملکی اختیار کن ہاتھوں میں دینا ہے؟ دینی جماعتوں نے ملک کو امن دیا ہے ،ووٹ سے بڑھ کر کوئی امانت نہیں اسے ضمیر کے خلاف استعمال نہ کریں۔ متحدہ مجلس عمل ہی ملکی حالات تبدیل کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ جو لوگ بیرونی ایجنڈے پر کاربند ہیں ، وہ پاکستان کے عوام کے لیے کچھ نہیں کر سکتے۔

انہوں نے کہا کہ ووٹ انتہائی اہم فریضہ ہے، ووٹ کے وزن کو اسلامی نظام کے نفاذ کے پلڑے میں ڈالا جائے، ہم اقتدار کے ایوانوں میں ووٹ کی قوت سے پہنچیں گے ،اب دینی قوتوں کا راستہ روکنے کی کسی میں قوت نہیں ، 25 جولائی ملک میں اسلامی قوتوں کی فتح کا دن ہوگا۔