عمران خان کی 10 مقدمات میں عبوری ضمانتوں میں 30 جولائی تک توسیع

عمران خان کی 10 مقدمات میں عبوری ضمانتوں میں 30 جولائی تک توسیع

اسلام آباد: سابق وزیراعظم عمران خان کی پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے لانگ مارچ کے دوران توڑ پھوڑ سے متعلق 10 مقدمات میں عبوری ضمانتوں میں 30 جولائی تک توسیع کر دی گئی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ سیشن عدالت میں پی ٹی آئی لانگ مارچ میں توڑ پھوڑ کے کیس میں عمران خان کی ضمانت کی درخواستوں کی سماعت سیشن جج کامران بشارت مفتی نے کی۔

ذرائع کے مطابق سابق وزیراعظم عمران خان نے تھانہ کوہسار میں درج مقدمے میں بھی ضمانت کیلئے عدالت سے رجوع کر لیا ہے جبکہ عدالت نے عمران خان کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست بھی منظور کر لی ہے۔ 

دوران سماعت جج نے ریمارکس دئیے کہ آپ کا سیاسی معاملہ ہے لیکن ملزم کا پیش ہونا بھی ضروری ہے جس پر جونیئر وکیل رائے تجمل نے عدالت کو بتایا کہ بابر اعوان بیرون ملک جا رہے ہیں اس لئے پیش نہیں ہوئے۔

سیشن جج کامران بشارت مفتی نے ریمارکس دئیے کہ تھانہ کوہسار میں درج مقدمے میں عمران خان کا پیش ہونا لازمی ہے، مقدمہ نمبر 425 میں فریش ضمانت ہے، اس کیلئے ملزم پیش ہو گا تو حکم جاری کروں گا۔

جونیئر وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ فریش ضمانت کی درخواست بھی آئندہ سماعت کیلئے مقرر کر دیں جس پر عدالت نے مقدمہ نمبر 425 میں درخواست ضمانت کی سماعت 30 جولائی کو مقرر کر دی۔ 

مصنف کے بارے میں