لیگی ایم پی ایز کی کڑی نگرانی شروع، موبائل فون کا استعمال محدود کرنے کا حکم 

لیگی ایم پی ایز کی کڑی نگرانی شروع، موبائل فون کا استعمال محدود کرنے کا حکم 

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) نے وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے قبل لیگی اور اتحادی ارکان اسمبلی کی کڑی نگرانی شروع کر دی ہے اور تمام ایم پی ایز کو موبائل فون کا استعمال محدود کرنے کا حکم بھی دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومتی اتحاد کے اراکین صوبائی دارالحکومت کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ کے قریب واقع نجی ہوٹل میں قیام پذیر ہیں اور لیگی قیادت کی جانب سے پیپلز پارٹی، راہ حق پارٹی اور دیگر آزاد ارکان اسمبلی کو کل 22 جولائی تک رائل سوئس ہوٹل ہی میں رہنے کی تاکید کی گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ہوٹل میں قیام پذیر ارکان صوبائی اسمبلی کو مخالف جماعتوں یا دیگر شخصیات کی جانب سے رابطوں سے بچانے کیلئے موبائل فون کا استعمال محدود کرنے کی ہدایت بھی کی گئی ہے جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن) نے ہوٹل کی لابیز میں اپنے کارکنوں کی مستقل ڈیوٹی بھی لگارکھی ہے جو وہاں قیام پذیر ارکان کی حاضری چیک کریں گے۔ 

ذرائع کے مطابق پنجاب کی وزارت اعلیٰ کے امیدوار حمزہ شہباز آج نجی ہوٹل میں حکومتی اتحاد کی پارلیمانی پارٹی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کریں گے جبکہ کل یعنی جمعے کو وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے سلسلے میں تمام ارکان اسمبلی حمزہ شہباز شریف کی قیادت میں ہوٹل سے ہی پنجاب اسمبلی جائیں گے 

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ حکومتی اتحاد نے 10 ارکان پر مشتمل 18 گروپس بنا کر ہر گروپ کا ایک ہیڈ مقرر کر دیا ہے اور ہر گروپ ہیڈ کو اپنے ارکان کی ہوٹل میں حاضری، پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں شرکت اور پنجاب اسمبلی روانگی بروقت یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ 

مصنف کے بارے میں