ڈی آئی خان میں بے حرمتی کا واقعہ، متاثرہ لڑکی نے عدالت سے رجوع کر لیا

ڈی آئی خان میں بے حرمتی کا واقعہ، متاثرہ لڑکی نے عدالت سے رجوع کر لیا

پشاور: ڈی آئی خان کی متاثرہ لڑکی نے تحفظ اور ملزمان کے خلاف موثر کارروائی کیلئے ہائیکورٹ میں درخواست جمع کرا دی۔ جس میں عدالت سے انہیں تحفظ فراہم کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔ درخواست گزار کی جانب سے موقف اپنایا گیا ہے کہ انہیں بااثر افراد سے خطرہ ہے۔ درخواست میں متاثرہ لڑکی نے ویڈیو بنانے والے شخص کا نام شامل کرنے کی بھی استدعا کی ہے۔


درخواست گزار کے مطابق ایف آئی آر میں ویڈیو بنانے والے شخص کا نام شامل نہیں ہے۔ کیس کی سماعت سے قبل پشاور ہائیکورٹ کے احاطے کے باہر متاثرہ لڑکی کے بھائی ساجد نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ان کے خاندان کو دھمکیاں مل رہی ہیں اور ان کی جانوں کو بااثر افراد سے خطرہ ہے جبکہ پولیس تعاون نہیں کر رہی۔

ساجد کا کہنا تھا کہ پولیس ملزمان کو پکڑنے میں تعاون نہیں کر رہی اور امید ہے عدالت سے انصاف ملے گا۔ اس موقع پر متاثرہ لڑکی کا کیس لڑنے والی نجی تنظیم کی چیئر پرسن سلمیٰ ملک کا کہنا تھا کہ یہ انتہائی حساس نوعیت کا کیس ہے۔

متاثرہ لڑکی کا کیس قاضی انور ایڈووکیٹ لڑ رہے ہیں اور یہ واقعہ پنچائیت میں کئے گئے فیصلوں کے باعث ہی پیش آیا ہے۔ پولیس کے عدم تعاون کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ان کی معلومات کے مطابق ڈی پی او کیس میں تعاون کر رہے ہیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں