دورہ آسٹریلیا ‘ کوہلی کی عدم موجودگی بھارتی جیت کے لئے مشکلات پیدا کر سکتی ہے ، شعیب اختر

Kohli's absence from Australia tour could create difficulties for India's victory: Shoaib Akhtar
آسٹریلیا کی ٹیم میں وارنر اور سٹیو سمتھ کی واپسی سے ٹیم مضبوط ہوئی ہے.فائل فوٹو/شعیب اختر

اسلام آباد:پاکستان کے سابق فاسٹ باﺅلر شعیب اختر نے کہا ہے کہ بھارت اور آسٹریلیا کے درمیان چار میچوں کی ٹیسٹ سیریز میں سخت مقابلے کی توقع ہے۔

بھارت آسٹریلیا سیریز کے حوالے سے بات کرتے ہوئے شعیب اختر نے کہا کہ ویرات کوہلی کے ٹیسٹ سیریز میں نہ ہونے سے بھارتی ٹیم کی مشکلات بڑھیں گی جبکہ آسٹریلیا کی ٹیم میں وارنر اور سٹیو سمتھ کی واپسی سے ٹیم مضبوط ہوئی ہے۔

شعیب اختر نے کہا کہ بھارت اور آسٹریلیا دونوں مضبوط ٹیمیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا کی کنڈیشنز میں کون بہتر ثابت ہوتا ہے اور وکٹیں کیسی ہوں گی یہ دیکھنا بہت دلچسپ ہوگا۔ آسٹریلیا دو سال پہلے ٹیسٹ سیریز کی شکست کا بدلہ لینے کی کوشش کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی ٹیم میں جیتنے کی صلاحیت ہے ‘ اگر بھارت کا مڈل آرڈر ناکام ہوگیا تو سیریز بچانا مشکل ہو جائے گا۔ شائقین اس سیریز کا انتظار کر رہے ہیں اور میری بھی سیریز میں گہری دلچسپی ہے۔ بھارت اور آسٹریلیا کے درمیان ایڈلیڈ میں کھیلا جائے گا پہلا ٹیسٹ میچ ڈے اینڈ نائٹ ہوگا جو پنک بال سے کھیلا جائے گا۔

شعیب اختر نے کہا کہ ڈے نائٹ ٹیسٹ میچ سب سے مشکل ہوتا ہے۔ بھارت کے بلے بازوں کو جسم کے قریب شارٹس کھیلنے ہوں گے۔ شعیب اختر نے کہا کہ روہت شرما ویرات کوہلی کی عدم موجودگی میں ٹیم کی قیادت کے اہل ہیں۔ وہ 2010ءسے مسلسل کھیل رہے ہیں۔

دوسری جانب سابق آسٹریلوی بلے باز ڈیرن لیہمن نے کہا ہے کہ امید ہے ورلڈ چیمپئن آسٹریلیا جلد پاکستان کا دورہ کرے گی۔ آسٹریلیا کے سابق ہیڈ کوچ نے 1988ءمیں اپنے دورہ پاکستان کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ آسٹریلوی ٹیم کی 24 سال سے پاکستان کا دورہ نہ کرنے کی کوئی وجہ نظر نہیں آتی۔

 آسٹریلیوی اخبار سے بات کرتے ہوئے ڈیرن لیہمن نے کہا کہ پاکستان بہت اچھی جگہ ہے۔ میں نے اپنے دورہ کے دوران وہاں بہت انجوائے کیا وہاں کے لوگوں کا کرکٹ سے لگاو کسی سے ڈھکا چھپا نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کرکٹ کی بہتری کے لئے اور محفوظ مقام ہونے کی وجہ سے وہاں جانے میں کوئی قباحت نہیں ہے۔