کراچی: ڈیفنس کے علاقے میں ڈی آئی جی پشاور شہاب مظہر کے بیٹے کو انکے ذاتی محافظ نے پھندا ڈال کر قتل کر دیا۔تفصیلات کے مطابق کراچی میں خیابان سحر ڈیفنس کے علاقے میں پشاور کے ڈی آئی جی شہاب مظہر کے بیٹے عمر شہاب کو انکے ذاتی محافظ فقیر محمد نے گلے میں رسی کا پھندا ڈال کر قتل کر دیا اور قتل کے بعد خود کو ایک کمرے میں بند کر دیا.

ملزم نے کچھ دیر بعد پولیس کو گرفتاری کر دی اور قتل کا اعتراف بھی کر دیا

ملزم کہ اسے 2 لاکھ روپے کی ضرورت تھی اور اس نے ڈی آئی جی شہاب مظہر کی اہلیہ سے مطالبہ کیا تھا کہ مجھے قرض اتارنے کے لئے رقم چاہیئے لیکن ان کے منع کرنے پر عمر شہاب سے جھگڑا ہو گیا اور پھر طیش میں آ کر اسے قریب پڑی رسی سے پھندا لگا کر قتل کردیا۔ فقیر محمد گزشتہ 5 ماہ سے ڈی آئی جی شہاب کے گھر پر ملازمت کر رہا تھا اور اس کا تعلق کشمور سے ہے۔ ڈی آئی جی شہاب مظہر بیٹے کے قتل کی خبر سن کر فوری طور پر پشاور سے کراچی کے لئے روانہ ہو گئے ہیں ۔