حرمین ہائی سپیڈ ٹرین پر صرف 10 کلومیٹر کا کام باقی,مکہ اور مدینہ کا فاصلہ سمٹ جائے گا

حرمین ہائی سپیڈ ٹرین پر صرف 10 کلومیٹر کا کام باقی,مکہ اور مدینہ کا فاصلہ سمٹ جائے گا

مکہ: سعودی شہرمکہ، مدینہ، جدہ اور رابغ حرمین ہائی سپیڈ ٹرین منصوبے کی تکمیل میں صرف دس کلومیٹر ٹریک کی تعمیر کا کام باقی رہ گیا ہے جسے جلد ہی مکمل کرلیا جائے گا۔عرب ذرائع ابلاغ کے مطابق پراجیکٹ کے سپروائزر بسام الغلام نے مکہ چیمبر آف کامرس میں ایک کانفرنس کے دوران بتایا ہے کہ مکہ میں الاسکان کے علاقے سے سات کلومیٹر ٹریک کی تعمیر کا کام جاری ہے۔


جبکہ دوسری جانب جدہ کے مضافات سے تین کلومیٹر ٹریک کی تعمیر کا کام باقی ہے جسے جلد مکمل کرلیا جائے گا۔اس آپریشن کا پہلا مرحلہ 12 سال تک چلے جس کے دوران یہ ٹرین تقریبا 1.2 ارب مسافروں کو ان کی منزل مقصود تک پہنچائے گی۔

بسام کا کہنا اس ٹرین کے باضابطہ افتتاح کے فورا بعد اس ٹرین کے ذریعے سے روزانہ 11400 سے لے کر 12400 مسافروں کو سفر کی سہولیات فراہم کرے گی۔ ٹرین کی مکمل سہولیات کی موجودگی کی صورت میں جدہ اور مکہ کے 19 ہزار 100 مسافروں سفر کرسکیں گے جبکہ مکہ اور مدینہ کے درمیان تین ہزار 800 اور رابغ اور مدینہ کے درمیان 8 ہزار مسافر سفر کرسکیں گے۔

پراجیکٹ کے سپروائزر کے مطابق اس ٹرین کی مدد سے ہر سال 20 لاکھ زائرین بھی فائدہ اٹھائیں گے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ٹرین کی حفاظت کے لئے اس کی رفتار کو 300 کلومیٹر تک رکھا جائے گا۔