احاطہ عدالت میں لڑکی کے رشتہ داروں نے مار مار کر لڑکے کا بھرکس نکال دیا

احاطہ عدالت میں لڑکی کے رشتہ داروں نے مار مار کر لڑکے کا بھرکس نکال دیا

لاہور:نوجوان کو پسند کی شادی کروانی مہنگی پڑ گئی، سیشن کورٹ میں پسند کی شادی کرنے والے نوجوان کو لڑکی کے رشتے داروں نے مار مار کر خوب درگت بنائی۔


تفصیلات کے مطابق پسند کی شادی کرنا جرم بن گیا،لڑکی کے رشتے داروں نے پہلے پسند کی شادی کرنے والے 25سالہ نوجوان حمزہ پر اغوا کا مقدمہ درج کروایا پھر عدالت میں پیشی کے موقع پر عدالتی کارروائی سے قبل اپنی ہی عدالت لگا لی اور لڑکے کی خوب دہلائی کی۔ایڈیشنل سیشن جج اختر علی بھنگو نے پسند کی شادی کرنے والے جوڑے کو بیانات قلمبند کروانے کیلئے طلب کیا تھا تاہم لڑکی کے رشتہ داروں نے احاطہ عدالت میں لڑکے پر دہاوا بول دیااور لاتوں،گھونسوں کی بارش کر ڈالی۔

ہنگامے کے باعث ،سیشن کورٹ کا اہاطہ میدان جنگ بنا رہا۔سیشن کورٹ سکیورٹی نے موقع پر پہنچ کر جھگڑا کرنے والے گروہ کو حراست میں لیکر تھانے منتقل کر دیاجبکہ ہنگامے کے باعث کیس بغیر کارروائی کے ملتوی کر دیا گیا۔