رانا ثناءاللہ کو جیل میں گھر کا کھانا دینے کی درخواست مسترد

رانا ثناءاللہ کو جیل میں گھر کا کھانا دینے کی درخواست مسترد
رانا ثناءاللہ کی صحت کو مد نظر رکھتے ہوئے کھانا دیا جا رہا ہے، جیل حکام۔۔۔۔۔۔۔فوٹو/ سوشل میڈیا

لاہور: عدالت نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثناءاللہ کو جیل میں گھر کا کھانا دینے کی درخواست مسترد کر دی۔منشیات اسمگلنگ کیس میں گرفتار رانا ثناءاللہ نے اپنے وکیل کے توسط سے لاہور کی مقامی عدالت میں درخواست دائر کی جس میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ رانا ثناءاللہ بیمار ہیں۔ ان کو گھر کا کھانا دینے کی اجازت دی جائے اور جیل قوانین کے مطابق زیر ٹرائل ملزم کو گھر کا کھانا دیا جا سکتا ہے۔


رانا ثناءاللہ کی درخواست پر جیل حکام نے سیشن جج لاہور کو رپورٹ جمع کرائی جس میں بتایا گیا ہے کہ رانا ثناءاللہ کی صحت کو مد نظر رکھتے ہوئے کھانا دیا جا رہا ہے۔ ان کا روزانہ کی بنیاد پر طبی معائنہ بھی کیا جا رہا ہے اور ان کی صحت ٹھیک ہے۔

جیل حکام کی رپورٹ کے بعد عدالت نے رانا ثناءاللہ کی جانب سے گھر کا کھانا فراہم کرنے کی درخواست مسترد کر دی اور انہیں متعقلہ فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ہے۔

خیال رہے کہ انسداد منشیات فورس (اے این ایف) نے رانا ثناءاللہ کو 2 جولائی کو فیصل آباد سے لاہور جاتے ہوئے گرفتار کیا اور اے این ایف نے دعویٰ کیا کہ رانا ثناء کی گاڑی سے بھاری مقدار میں منشیات برآمد کی گئی۔