یونس خان بیٹنگ کوچ کے عہدے سے دستبردار کیوں ہوئے؟ اندرونی کہانی سامنے آ گئی

یونس خان بیٹنگ کوچ کے عہدے سے دستبردار کیوں ہوئے؟ اندرونی کہانی سامنے آ گئی
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے بیٹنگ کوچ یونس خان اور پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے درمیان اختلافات کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی، پی سی بی کے ساتھ شدید اختلافات یونس خان کی عہدے سے دستبرداری کی وجہ بنے۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق پی سی بی سے شدید اختلافات یونس خان کی مینجمنٹ سے علیحدگی کی وجہ بنے اور مختلف اختلافات کی وجہ سے یونس خان نے دورہ انگلینڈ سے قبل لاہور کے بائیو سکیور ببل میں بھی رپورٹ نہیں کی، یونس خان نے ببل میں تاخیر سے رپورٹ کرنا تھی اور اس دوران بورڈ کے اعلیٰ عہدیدار اختلافات ختم کرنے کی کوشش کرتے رہے تاہم اس معاملے میں کامیابی نہ مل سکی۔ 

ذرائع کا کہنا ہے کہ یونس خان کو متعدد معاملات پر پی سی بی انتظامیہ سے اختلافات تھے، جنوبی افریقہ کے خلاف ہوم سیریز سے پہلے محمد یوسف کو کیمپ میں بھیجنا بھی یونس خان کو ناگوار گزرا تھا ، این ایچ پی سی کے کوچز اور ان کے طریقے پر بھی یونس خان کو تحفظات تھے جس پر چیف ایگزیکٹو وسیم خان نے ذاتی کوششوں سے یونس خان کو بیٹنگ کوچ کیلئے رضا مند کیا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ ماضی میں یونس خان نے انڈر 19 کا کوچ بننے سے منع کیا تھا اور تین برس قبل وہ اکیڈمی میں مناسب کمرہ نہ ملنے پر کوچنگ کورس چھوڑ کر چلے گئے تھے جبکہ 2006ءمیں اچانک یونس خان کپتانی سے بھی دستبردار ہو گئے تھے۔ 

ذرائع کا کہنا ہے کہ جب وہ بطور کرکٹر پاکستانی ٹیم کا حصہ تھے، تب بھی پی سی بی کے تعلقات ناخوشگوار رہتے تھے اس لئے یونس خان کا کوچ کی حیثیت سے ذمہ داریاں سنبھالنے ناقدین کیلئے حیران کن تھا تاہم اب وہ اپنے عہدے سے دستبردار ہو گئے ہیں جس کے باعث بیٹنگ کوچ نیشنل ہائی پرفارمنس سینٹر محمد یوسف کو وقتی طور پر ذمہ داریاں سونپی جاسکتی ہیں۔