لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم کی وزیراعظم کے خلاف درخواست کی سماعت سے معذرت

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم کی وزیراعظم کے خلاف درخواست کی سماعت سے معذرت

لاہور:لاہور ہائیکورٹ کے جج نے وزیر اعظم عمران خان کے خلاف دائر درخواست کی سماعت سے معذرت کرلی ۔ جسٹس شاہد کریم نے وزیراعظم کے بیرون ممالک دوروں پر اخراجات کی تفصیلات کی فراہمی کیلئے متفرق درخواست پر سماعت سے معذرت کی ہے۔


عدالت نے کیس کو کسی اور عدالت میں مقرر کرنے کیلئے فائل چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ کو بھجوا دی۔جسٹس شاہد کریم نے لائرز فاﺅنڈیشن فار جسٹس کی متفرق درخواست پر سماعت کے دوران کہا کہ وہ اس کیس کی سماعت نہیں کرنا چاہتے۔درخواست گزار کے وکیل اے کے ڈوگر نے کہا کہ میرا کوئی بھی کیس سماعت کیلئے مقرر ہوتا ہے تو اسے دوسری عدالت کیوں بھیج دیا جاتا ہے؟۔

جسٹس شاہد کریم نے ریمارکس دیئے کہ یہ انکا صوابدیدی اختیار ہے ،وہ اس کیس کی سماعت نہیں کرنے چاہتے۔لائرز فاﺅنڈیشن فارجسٹس کی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ عمران خان نے عوام سے وعدہ کیا تھا کہ وہ خصوصی طیاروں میں سفر نہیں کریں گے۔عمران خان نے دعویٰ کیا تھا کہ وہ آئی ایم ایف سے قرضہ لینے کے بجائے خودکشی کو ترجیح دیں گے ، اسلام میں بھیگ مانگنا منع ہے اور وزیراعظم نے سعودی عرب سے 3 بلین ڈالر مانگے۔

درخواست گزار کے مطابق تھر میں بچے غذائی قلت کا شکار ہیں اور وزیراعظم عمران خان شاہانہ زندگی گزار رہے ہیں اور بیرون ملک دوروں کے لیے خصوصی جہاز استعمال کرنے کے ساتھ ساتھ کروڑوں روپے خرچ کررہے ہیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی کہ معلومات تک رسائی کے قانون کے تحت معلومات حاصل کرنا ہر شہری کا بنیادی حق ہے،عدالت عمران خان کے 9 ممالک میں خصوصی طیاروں پرکیے جانے والے سفر پر آنے والے اخراجات کی تفصیلات طلب کرے۔