رشوت طلب کرنے پر خود سوزی کرنے والا رکشا ڈرائیور دم توڑ گیا

رشوت طلب کرنے پر خود سوزی کرنے والا رکشا ڈرائیور دم توڑ گیا
ٹریفک پولیس اہلکار نے 50 روپے رشوت نہ دینے پر خالد کا 170 روپے کا چالان کاٹ دیا تھا۔۔۔۔۔فائل فوٹو

کراچی: شارع فیصل پر ٹریفک پولیس کی جانب سے رشوت طلب کرنے پر خودسوزی کرنے والا رکشا ڈرائیور دم توڑ گیا۔شارع فیصل پر کراچی پولیس آفس کے سامنے قائم ٹریفک چوکی پر اے ایس آئی حنیف نے رکشہ ڈرائیور خالد سے مبینہ طور پر رشوت طلب کی لیکن ڈرائیور کی جانب سے انکار پر چالان کر دیا جس پر وہ مشتعل ہو گیا اور خود پر پیٹرول چھڑک کر آگ لگا لی تھی۔


آگ کے نیتجے میں خالد 55 فیصد جھلس گیا تھا جسے فوری طور پر زخمی حالت میں سول اسپتال کے برن وارڈ منتقل کیا گیا جہاں اسے طبی امداد دی جا رہی تھی تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔ دوران علاج ایڈیشنل آئی جی کراچی ڈٓاکٹر امیر شیخ نے اسپتال میں خالد کی عیادت کی تھی۔

واضح رہے رکشا ڈرائیور نے الزام لگایا تھا کہ ٹریفک پولیس اہلکار نے 50 روپے رشوت نہ دینے پر 170 روپے کا چالان کاٹ دیا تھا۔