عراقی بینک کا ملازمین کیلئے دوسری شادی پر 10 ملین دینار قرض کا اعلان

عراقی بینک کا ملازمین کیلئے دوسری شادی پر 10 ملین دینار قرض کا اعلان

بغداد :عرب ملک عراق کے شہریوں کیلئے اب تک کی بڑی خوشخبری اس صورت میں آگئی کہ دوسری شادی کرنے پر 10 ملین دینار قرض دیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق عراقی ویب سائٹ سبق کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ معروف بینک الرشید نے اعلامیہ جاری کر کے کہا ہے کہ ’بینک کے ہر ملازم کو دوسرا نکاح کرنے پر قرض فراہم دیا جائے گا،لیکن شرط یہ ہے کہ اس نے پہلی شادی کیلئے قرض نہ لیا ہو۔‘

’تمام بینک ملازمین کو دوسرے نکاح کے لیے استثنیٰ کے بغیر قرض دیا جائے گا اور اس کی شرط یہ ہے کہ وہ بینک کا باقاعدہ ملازم ہو اور اس کی ملازمت کو دو سال کا عرصہ بیت گیا ہو‘۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ دوسری شادی کے خواہش مند کو 10 ملین عراقی دینار قرض دیا جائے گا جبکہ ایک ڈالر 1250 عراقی دینار کے برابر ہے۔

دوسری جانب غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق عراق میں معمر کنواریوں کی شرح میں خطرناک حد تک اضافہ ہوگیا ہے۔عراقی معاشرے میں معمر کنواریاں ان خواتین کو کہا جاتا ہے جن کی عمر 35 سال سے تجاوز کر چکی ہو اور اس کی ابھی تک شادی نہ ہوئی ہو۔

ایک سروے رپورٹ سے معلوم ہوا ہے کہ ’ملک میں معمر کنواریوں کی شرح 70 فیصد تک ہوگئی ہے‘۔ملک میں سیاسی عدم استحکام اور معاشی ابتری کے باعث نوجوان شادی کرنے کے قابل نہیں رہے جبکہ موقع پاتے ہی ملک سے باہر جانے کو ترجیح دے رہے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ لڑکیوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے جبکہ شادی کی عمر پار کرنے والی لڑکیوں کی تعداد مسلسل بڑھ رہی ہے۔