حکومتی وزرا ملک اور ریاست کے بیانیے کی جنگ فرنٹ فٹ پر آ کر لڑیں، وزیراعظم

pm imran khan , pti
وزیراعظم نے پنجاب کے وزرا کو پارٹی موقف بھر پور اندازسے اجاگر کرنے کا ٹاسک دیدیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے پنجاب کے وزرا کو ہدایت کی ہے کہ ملک اور ریاست کے بیانیے کی جنگ فرنٹ فٹ پر آ کر لڑیں.وزیراعظم عمران خان سے میاں محمود الرشید، ڈاکٹر یاسمین راشد ، راجہ بشارت، فیاض الحسن چوہان ، ڈاکٹر مراد راس ، راجہ یاسر ہمایوں اور انصر مجید نے ملاقات کی۔ وزیراعظم نے پنجاب کے وزرا کو میڈیا میں پارٹی موقف بھر پور اندازسے اجاگر کرنے کا ٹاسک دے دیا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے وزرا سے استفسار کیا کہ پنجاب کے پارٹی کے سینیئر صوبائی وزرا خاموش کیوں ہیں۔ آخر کیا وجہ ہے کہ وزرا میڈیا پر فرنٹ فٹ پر نظر نہیں آتے جبکہ وزرا ملک اور ریاست کے بیانیے کی جنگ فرنٹ فٹ پر آ کر لڑیں۔

وزیراعظم نے وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کے پارٹی مؤقف کو اجاگر کرنے کے حوالے سے کردار کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ فیاض الحسن چوہان کی طرح دوسرے وزرا بھی کھل کر سامنے آئیں اور سینئر وزرا خاموشی ختم کریں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم نے ایک روزہ دورہ لاہور کے دوران اشیائے خورونوش کی قیمتوں پر قابو سمیت مختلف اہم اجلاس اور ملاقاتیں کیں تھیں۔ ایوان وزیراعلیٰ میں وزیراعظم کے زیر صدارت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں اور دستیابی بارے اعلیٰ سطح اجلاس ہوا۔

اجلاس میں وزیراعظم کو بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں اور دستیابی بارے بریفنگ دی گئی۔ انھیں بتایا گیا کہ صوبہ بھر میں سہولت بازار قائم کیے جا رہے ہیں جن میں کم قیمت پر اشیا فراہم کی جائیں گی۔ ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری کی مانیٹرنگ سیکریٹری اور ضلعی انتظامیہ جبکہ معاونت ٹائیگر فورس کرے گی۔

چیف سیکریٹری نے یقین دہانی کرائی کہ صوبہ میں گندم اور آٹے کی قلت نہیں ہوگی۔ وزیراعظم نے کہا کہ گندم اور اشیائے ضروریہ کی خریداری کو منصوبہ بندی کے تحت یقینی بنایا جائے تا کہ مہنگائی نہ ہو۔ عوام کے لیے ہونے والی مہنگائی کی وجہ سے مجھے سب سے زیادہ تکلیف محسوس ہوتی ہے۔ عوامی ریلیف کی فراہمی میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کروں گا۔

وزیراعظم عمران خان نے ریور راوی منصوبے کے اجلاس کی صدارت بھی کی۔ چیئرمین ریور راوی نے پراجیکٹ کے دورانیہ اور بیرونی سرمایہ کاروں کی دلچسپی سے آگاہ کیا۔

عمران خان نے کہا کہ منصوبے پر ہونے والی پیشرفت سے مسلسل آگاہ رکھا جائے اور روزانہ مانیٹرنگ رپورٹ فراہم کی جائے۔ وزیراعظم نے وزیراعلیٰ پنجاب، آئی جی پنجاب پولیس اور چیف سیکرٹری کے ساتھ بھی میٹنگ کی۔ میٹنگ میں ذخیرہ اندوزوں کے خلاف سخت کارروائی اور عام آدمی کو ریلیف دینے کی ہدایت دی گئی۔

وزیراعظم نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ون آن ون ملاقات بھی کی۔ ملاقات میں سیاسی صورتحال اور قیمتوں کو کنٹرول کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔