مشرف اتنا بہادر ہے توفرار ہونے کے بجائے آکر عدالتوں کا سامنا کرے، آصف زرداری

مشرف اتنا بہادر ہے توفرار ہونے کے بجائے آکر عدالتوں کا سامنا کرے، آصف زرداری

کمالیہ : پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری سابق صدر جنرل مشرف کی جانب سے الزامات کے بعد میدان میں آگئے۔ ان کا کہنا ہے کہ ہم مشرف کے خلاف عدالتوں میں گئے تو اس نے مجھ پر الزام لگانا شروع کردئیے، مشرف اتنا ہی بہادر ہے توفرار اختیار کرنے کی بجائے پاکستان میں آکر عدالتوں کا سامنا کرے۔


کمالیہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق صدر کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی پر الزامات لگانے کا سلسلہ نیا نہیں ہے،جب مرتضی بھٹو کو قتل کیا گیا تو اس وقت بھی مجھ پر اور بینظیر بھٹو پر الزامات لگائے گئے ، اس وقت بی بی شہید نے کہا تھا کہ تم لوگ ایک بھٹو کو شہید کرتے ہوئے اور دوسرے بھٹو کی حکومت گرانا چاہتے ہو۔ پاکستان میں الزام لگانے والے پر الزام لگادینا اپنا بہترین دفاع مانا جاتا ہے۔

آصف زرداری نے کہا کہ اسحاق ڈار معاشی طور پر زخمی پاکستان کو چھوڑ کر بیرون ملک فرار ہو چکے ہیں۔ ہم نے پہلے ہی فیصلہ کیا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کو چار سال تک حکومت کرنے دیں گے مگر میاں صاحب کو حکومت کرنا آتی ہے اور نہ ہی یہ حکومت سنبھال سکتے ہیں۔ موجود حکومت نے کی پالیسیوں کی وجہ سے معیشت تباہی کے دھانے پر پہنچ چکی ہے اور اب یہ کہیں گے کہ ہمیں نکالنے کی وجہ سے معیشت میں گراوٹ ہوئی ہے۔ حالانکہ ہمارے دور میں بھی یوسف رضا گیلانی کو نکالا گیا مگر ہم نے بھی کبھی ایسا نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ این اے120میں پیپلز پارٹی اگر کارکردگی نہیں دکھا سکھی تو عمران خان نے کون سا تیر مار لیا ہے۔ نواب شاہ سے میری بہن نے1لاکھ 20ہزار ووٹ حاصل کئے ہیں ، ن لیگ وہاں سے ووٹ حاصل کرے تو میں مانوں کہ انہوں نے کام کیا ہے۔ عمران خان پیپلز پارٹی پر تنقید کرتے ہیں انہوں نے خیبر پختونخواہ میں ایک پل تعمیر کرنے کے علاوہ کون سا نیا پاکستان بنایا ہے۔