تاپی منصوبے سے خطے میں مجموعی طور پر خوشحالی آئے گی، وزیراعظم

تاپی منصوبے سے خطے میں مجموعی طور پر خوشحالی آئے گی، وزیراعظم

سرحت آباد: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ترکمانستان کے شہر سرحت آبات میں تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب میں کہا کہ منصوبے کو حقیقت میں بدلنے پر تاپی ممالک کے شکرگذار ہیں۔ تقریب میں ترکمانستان کے صدر، افغان صدر اشرف غنی اور بھارتی وزیر مملکت برائے خارجہ ایم جے اکبر بھی شریک تھے۔


وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ انرجی کوریڈور میں گیس، ریل، روڈ اور مواصلات کا نظام شامل ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان دنیا بھر کے تاجروں کو سرمایہ کاری کے محفوظ مواقع فراہم کرتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاک-چین اقتصادی راہداری حقیقت کا روپ دھار چکی ہے اور گوادر بندرگاہ وسطی ایشیا سمیت خطے کے ملکوں کو سہولت فراہم کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے بہت سے اقتصادی چلینجز پر قابو پا لیا ہے۔ پاکستان میں گیس کی کمی پر قابو پا لیا گیا ہے اور ملک میں گزشتہ چار سال میں بجلی کی پیداوار میں 10 ہزار میگاواٹ سے زیادہ اضافہ ہوا ہے۔

اس سے قبل وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ترکمانستان کے شہر میری میں ترکمان صدر قربان محمدوف سے ملاقات کی۔

ملاقات کے دوران دونوں رہنماؤں نے دو طرفہ تعاون، توانائی، تجارت اور اقتصادی راہداری کے حوالے سے تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کی اہمیت کو اجاگر کیا اور علاقائی سیکیورٹی سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر بات چیت کی۔

اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ دونوں ملکوں کے درمیان دو طرفہ تعلقات میں ایک نئے باب کا اضافہ کرے گا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں