سپریم کورٹ میں دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت 6 مارچ تک ملتوی

سپریم کورٹ میں دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت 6 مارچ تک ملتوی

اسلام آباد:سپریم کورٹ میں وفاقی وزیر دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت 6 مارچ تک ملتوی کردی گئی ہے۔


ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ میں دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کے دورا ن جسٹس عظمت سعید نے استفسارکیا کہ ہم نے آپ کے لیے سکرین آویزاں کی ہے،ہمیں کونسی فلم دکھا رہے ہیں؟ کس کس فلم کو آسکر ایوارڈ ملا؟ جس پردانیال عزیزکےوکیل نے کہا میں نے کوئی فلم نہیں دکھانی تحریری جواب داخل کروایا ہے، پی آئی ڈی کو بھی اصل تقریر کے کلپ کے لیے درخواست کی ہے۔

جسٹس شیخ عظمت سعید نے وکیل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا علی رضا ، آپ کے پاس کریڈٹ کارڈ ہوگا؟ کریڈٹ کارڈ کی طرح ہر کام کی  ایک حد ہوتی ہے، اپنے کریڈٹ کارڈ کی حدختم نہ کریں، میری بات آپ سمجھ گئے ہوں گے۔ وہ کھیل نہ کھیلیں جو میری ایجاد ہے، 6 مارچ کی تاریخ دی ہے، مزید وقت دینا مناسب نہیں ہوگا، ا س کے بعد کیس ملتوی نہیں ہوگا۔ علی رضا ایڈووکیٹ نے کہا کہ وہ عدالت کے ساتھ مکمل تعاون کریں گے ۔ وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز کو توہین آمیز تقریروں کا ریکارڈ فراہم کردیا جبکہ وفاقی وزیر کو فراہم کردہ ریکارڈ کو ہائی لائٹ بھی کیا گیا ہے۔ عدالت نے کیس کی مزید سماعت 6 مارچ تک ملتوی کردی۔

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو میں دانیال عزیز نے کہا کہ توہین عدالت کیس میں جواب جمع کرادیا ہے اور آج کل جو فلم چل رہی ہے یہ آپ پہلے بھی کئی بار دیکھ چکے ہیں ۔خیال رہے کہ عدالت نے توہین عدالت کیس میں وفاقی وزیر دانیال عزیز کو طلب کیا تھا۔