عامر خان کو بالی وڈ کا نیا بادشاہ کیوں قرار دیا گیا؟

عامر خان کو بالی وڈ کا نیا بادشاہ کیوں قرار دیا گیا؟

ممبئی : عامر خان کی فلم دنگل بالی وڈ انڈسٹری کی تاریخ میں سب سے زیادہ کمانے والی فلم بن گئی ہے۔


گزشتہ ماہ ریلیز ہونے والی فلم نے باکس آفس پر 5.5کروڑ ڈالرز سے زائد جمع کئےہیں۔عامر نے اس سنگ ِ میل کو عبور کرنے کی خوشی کا اظہار ٹوئٹرپر کیا۔انہوں  نے لکھا کہ میں دنگل کو ملنے والی محبت سے لبریز ہو گیا ہوں۔ میرے لئےیہ اب تک کا سب سے زبردست ردعمل ہے۔میں سب کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔

دنگل میں مرکزی کردار پر فلم فیئر ایوارڈ جیتنے کو سونے پر سہاگہ قرار دیا۔

گزشتہ دہائیوں میں عامر کو ان کی معیاری فلموں کی وجہ سے خوب سراہا گیا ہےاور ان کی فلموں نے شاہ رخ خان کی فلموں سے زیادہ کمائی کی ہے۔ یہاں تک کہ آئی ایم ڈی بی عامر خان کو ان کی فلموں کی کامیابی کے سبب بالی وڈ کا حاکم مانتا ہے۔

اب 2014 کی 'پی کے'کے بعد دنگل کی غیر معمولی کامیابی کے بعد عامر خان سب کو پچھاڑ کر بالی وڈ کے بادشاہ بن گئے ہیں۔ 2013 میں ریلیز ہونے والی ان کی فلم  دھوم 3 بھی بلاک بسٹر فلم ثابت ہوئی تھی۔

بے شک 51 سالہ اداکار نے یہ باربار ثابت کیا ہے کہ وہ شاہ رخ سے زیادہ بڑے اسٹارہیں۔

شاہ  رخ خان جو بالی وڈ پر دل والے دلہنیا لے جائیں گے کے بعد سے حکومت کر رہے ہیں، نے 80سے زائد فلموں میں کام کیا ہے اور دنیا کی نصف آبادی انہیں جانتی ہے۔ جبکہ عامر  نہ تو بالی وڈ ایوارڈ تقریبات میں جاتے ہیں نہ ہی کنسرٹ وغیرہ میں پرفارم کرتے ہیں۔

شاہ رخ خان کی پچھلی فلمیں باکس آفس پر کچھ خاص کمال نہیں دکھا پائی ہیں۔ پچھلے سال بطور اداکار  ان کے مختلف کرداروں کو تو سراہا گیا لیکن ان کی فلم ڈیئر زندگی اور فین کی کُل آمدن 2.5کروڑ ڈالرز سے بھی کم رہی۔ ان کی آخری سپر ہٹ 2013کی چنئی ایکسپریس تھی۔

تاہم 25جنوری کو ریلیز ہونے والی فلم رئیس، شاہ رخ خان کیلئے باکس آفس پر کچھ کمال کرنے کیلئے ایک اچھا موقع ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source