کامیابی کیلئے پیچھے مڑنے کا کوئی راستہ نہیں ہوتا، وزیراعظم عمران خان

کامیابی کیلئے پیچھے مڑنے کا کوئی راستہ نہیں ہوتا، وزیراعظم عمران خان
کامیابی حاصل کرنے کیلئے کوئی پلان بی نہیں ہوتا، وزیراعظم عمران خان۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فوٹو/ اسکرین گریب

ڈیووس: وزیراعظم نے کہا ہے کہ کامیابی کیلئے پیچھے مڑنے کا کوئی راستہ نہیں اور نظریات کے بغیر قومیں تباہ ہو جاتی ہیں۔ اکثر لوگ مشکل میں ہمت ہار دیتے ہیں اور کرکٹ ٹیم سے نکالنے پر واپسی میں تین سال لگے اور انسان کی اصل کامیابی برے حالات میں بھی پرامید رہنا ہے۔


پاکستان بریک فاسٹ میٹ کی تقریب سے وزیراعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کرپٹ سٹیٹس کو پاکستان کا بھی مسئلہ ہے، کرپٹ افراد اداروں کو تباہ کر دیتے ہیں، ہم آہستہ لیکن بتدریج تبدیلی کی جانب بڑھ رہے ہیں، 40 سال سے تنقید کا سامنا کر رہا ہوں، پاکستان کی ترقی کیلئے بہتر نظام حکومت ہونا نا گزیر ہے، سابقہ حکومتوں نے افرادی قوت، تعلیم و صحت پر اب تک کچھ خرچ نہیں کیا۔

عمران خان کا کہنا تھا نظریات کے بغیر قومیں تباہ ہو جاتی ہیں، کامیابی کیلئے پیچھے مڑنے کا کوئی راستہ نہیں ہے، کامیابی حاصل کرنے کیلئے کوئی پلان بی نہیں ہوتا، 60 کی دہائی میں پاکستان بھرپور ترقی کر رہا تھا اور ہم رول ماڈل تھے، ہماری ڈگریوں کی پذیرائی ہوتی تھی، میرا یقین ہے گڈ گورننس کے باعث پاکستان ترقی کرے گا۔

وزیراعظم نے کہا بھارت پاکستان کے مقابلے میں 7 گنا بڑا ہے، ہم نے کئی بار شکست دی، بڑے ہدف کو پانے کیلئے آپ کو اپنی کشتیاں جلانا پڑتی ہیں، ہم تعلیم اور انسانوں پر پیسہ خرچ نہیں کرتے، پاکستان کو فلاحی ریاست بنانا میرا وژن ہے، ہم صنعتکاری کو فروغ دے رہے ہیں، غربت میں کمی کیلئے حساس پروگرام شروع کر رہے ہیں، حکومت سرمایہ کاروں کو سہولتیں دے رہی ہے۔