کڈنی ہلز ریفرنس میں سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سمیت دیگر ملزمان پر فردجرم عائد

کڈنی ہلز ریفرنس میں سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سمیت دیگر ملزمان پر فردجرم عائد
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

اسلام آباد: احتساب عدالت نے کڈنی ہلز ریفرنس میں سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا، اعجازہارون اورعبدالغنی مجید سمیت دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کرتے ہوئے سماعت 13 جولائی تک ملتوی کر دی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق تمام ملزموں نے صحت جرم سے انکار کردیا اور عدالت نے آئندہ سماعت پر نیب کے گواہان طلب کر لئے ہیں۔ سابق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا سمیت دیگر ملزمان کے کیس کا باقاعدہ ٹرائل شروع ہو گیا۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی،عدالت نے تمام ملزمان طارق محمود، عبدالقادرشہوانی کو چارج شیٹ پیش کی۔ عدالت نے بیانات قلمبند کرنے کیلئے گواہان نثار مگسی اور شیخ کمال کو نوٹس جاری کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر طلب کر لیا۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کے دوران سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ چیئرمین نیب کو پارلیمینٹ اور عدالتوں میں بلائیں گے، غلط ریفرنسز سے متعلق سوالات پوچھے جائیں گے، اگر جاوید اقبال دوبارہ چیرمین نیب بنے تو اور تباہی ہو گی۔