بھارت نے یاسین ملک کی جماعت پر پابندی لگا دی

بھارت نے یاسین ملک کی جماعت پر پابندی لگا دی
جے کے ایل ایف مقبوضہ کشمیر میں علیحدگی و انتشار کو فروغ دے رہی ہے، بھارتی حکام۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

سری نگر: بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں حریت رہنما یاسین ملک کی جماعت جموں کشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) پر پابندی لگا دی۔


بھارتی حکام نے کہا کہ غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر جے کے ایل ایف پر پابندی عائد کی گئی ہے کیونکہ اس بات کے ثبوت موجود ہیں کہ یہ تنظیم مقبوضہ کشمیر میں علیحدگی و انتشار کو فروغ دے رہی ہے۔

جے کے ایل ایف آزاد اور مقبوضہ کشمیر کو یکجا کر کے ایک آزاد اور خود مختار ملک بنانے کی بات کرتی ہے جبکہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دینے کے لیے استصوابِ رائے کرانے کا بھی مطالبہ کرتی ہے۔ جے کے ایل ایف مقبوضہ کشمیر، آزاد کشمیر میں سرگرم ہے اس کے علاوہ اس کے یورپی ممالک، برطانیہ اور امریکہ میں بھی دفاتر ہیں۔

جے کے ایل ایف مقبوضہ کشمیر کی دوسری تنظیم ہے جس پر اس ماہ پابندی لگا دی گئی ہے۔ رواں ماہ کے شروع میں بھارتی حکومت نے جماعتِ اسلامی جموں و کشمیر کو بھی کالعدم قرار دے کر پانچ سال کے لئے پابندی عائد کی ہے۔