بورڈ کا چیئرمین بن گیا تب بھی پاکستان سپر لیگ کی سربراہی نہیں چھوڑوں گا،نجم سیٹھی

لاہور:  سربراہ پی ایس ایل نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ چیئرمین پی سی بی کا عہدہ سنبھالنے پر بھی پی ایس ایل کی سربراہی نہیں چھوڑوں گا، ہر سطح پر کرکٹ سے کرپشن کا خاتمہ کرنے کی پوری کوشش ہو گی۔ میڈیاسے بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ بورڈ کا چیئرمین بن گیا تب بھی پاکستان سپر لیگ کی سربراہی نہیں چھوڑوں گا،البتہ ایک بات واضح کردوں کہ ابھی کچھ بھی حتمی طور نہیں کہا جا سکتا، مجھے پی ایس ایل کا سربراہ پی سی بی گورننگ بورڈ نے مقرر کیا تھا،اس لیے عہدہ چھوڑنے کی کوئی ضرورت نہیں۔

ایک سوال پر نجم سیٹھی نے کہا کہ اگر چیئرمین پی سی بی بنا تو پی ایس ایل کو پاکستان لانا اولین ترجیح ہوگی،اسی میں لیگ اور ملک کا فائدہ ہے۔ پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی دوسرا بڑا مقصد ہے، ڈومیسٹک ٹورنامنٹ ہوں یا بین الاقوامی میچز میں ہر سطح پر کرپشن کا خاتمہ کرنا چاہتا ہوں،جسٹس قیوم رپورٹ کی سفارشات پر خاص طور پر نظر میں رکھوں گا۔ نجم سیٹھی نے کہا کہ کرکٹ کو عالمی معیار سے ہم آہنگ کرنے کیلئے کوالیفائیڈ کیوریٹرز کو متعارف کرانا ضروری ہے، ملکی پچز پر گھاس اور بانس ہو تو پاکستانی کرکٹرز کو غیر ملکی کنڈیشنز میں کھیلتے ہوئے زیادہ دشواری کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔

انھوں نے مزید کہا کہ کرکٹ اکیڈمیز کا ڈھانچہ بھی تبدیل کرنے کی کوشش کریں گے،ڈپارٹمنٹس کو اجازت ہوگی کہ اپنے کھلاڑی ریجنز کو دے سکیں،اس فیصلے سے علاقائی ٹیمیں مضبوط ہو سکتی ہیں۔واضح رہے کہ چیئرمین پی سی بی شہریار خان کے عہدے کی مدت اگست میں ختم ہوگی، ان کا خلا پر کرنے کیلئے نجم سیٹھی مضبوط امیدوار ہیں۔

مصنف کے بارے میں