پاکستان اور نالائق وزیراعظم ایک ساتھ نہیں چل سکتے، رانا ثنا اللہ

پاکستان اور نالائق وزیراعظم ایک ساتھ نہیں چل سکتے، رانا ثنا اللہ
اسٹیٹ بینک پر آئی ایم ایف کو بٹھا دیا گیا اور غریب آدمی 2 وقت کی روٹی نہیں کھا سکتا، رانا ثنااللہ۔۔۔۔۔۔فوٹو/ اسکرین گریب نیو نیوز

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثنا اللہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا نالائق وزیراعظم اور پاکستان ایک ساتھ نہیں چل سکتے اور پی ٹی آئی جسے چاہیے آگے لے آئے۔ اسٹیٹ بینک پر آئی ایم ایف کو بٹھا دیا گیا  پھر ڈالر کی پرواز تو اس طرح ہی ہو گی۔


انہوں نے کہا وزیراعظم نے پارلیمنٹ میں کہا تھا کہ مودی میرا ٹیلیفون نہیں اٹھا رہا اور ہمارے دور میں مودی خود آئے تو شور مچایا گیا اور میاں صاحب نے میثاق معیشت کا کہا تو این آر او کا الزام لگا دیا گیا۔ یہ خود کسی کیساتھ بیٹھنے کو تیار ہیں نہ کوئی ان کے ساتھ بیٹھے گا۔

رانا ثنااللہ نے کہا اسٹیٹ بینک پر آئی ایم ایف کو بٹھا دیا گیا اور غریب آدمی 2 وقت کی روٹی نہیں کھا سکتا اور 25 سے 30 ہزار کمانے والا گھر نہیں چلا سکتا۔ کوئی ان نالائقوں سے پوچھے ڈالر 135 سے 155 کا کیسے ہو گیا۔ انہوں نے کہا ملک کو ناقابل تسخیر بنانیوالا نواز شریف پابند سلاسل ہے اور ہماری قیادت نے اس ملک کیلئے میثاق جمہوریت کی بات کی ۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے سینیٹر مشاہد اللہ نے کہا ملک کو آئی ایم ایف کے حوالے کر دیا گیا اور مہنگائی کا بوجھ پہلے ماہ ہی ڈال دیا جاتا ہے۔ ریلیف دینے کے وقت حکومت کہتی ہے 2 سال چاہئیں۔

انہوں نے کہا ہم بھی آئی ایم ایف کے پاس گئے تھے اور آئی ایم ایف نے ہمیں اپنا گورنر سٹیٹ بینک رکھنے کا نہیں کہا تھا اور آئی ایم ایف کو پتہ تھا نواز شریف چور نہیں ہے۔ اپنے بندے لگا کر آئی ایم ایف نے عمران خان پر عدم اعتماد کیا۔