وزیر اعظم پارلیمنٹ سے زیادہ لندن میں وقت گزارتے ہیں: خورشید شاہ

وزیر اعظم پارلیمنٹ سے زیادہ لندن میں وقت گزارتے ہیں: خورشید شاہ

پشاور: اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کو بیرونی دوروں سے فرصت نہیں ۔ وہ پارلیمنٹ سے زیادہ وقت لندن میں گزارتے ہیں۔ قومی ٹیمپرامنٹ کے مطابق اسمبلیوں کی مدت 4 سال ہونی چاہیے۔


پشاور میں حاجی عدیل  کے خاندان سے اظہار تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا کہ جو قوم قرضوں پر انحصار کرے وہ اپنی بقا کا تحفظ نہیں کرسکتی۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت مسلمان ملکوں پر اثر انداز ہونے کی کوشش کر رہا ہے،ایران، امارات اور سعودی عرب میں مودی کی پذیرائی ہماری حکومت کی ناکام خارجہ پالیسیوں کا ثبوت ہے۔

پاناما لیکس پر پوچھے گئے سوال پر ان کا کہناتھا کہ عدالت سے کسی کا وکیل بھاگ رہا ہے، معاملہ لمبا جائے گا اس لیے عدالت نہیں گئے۔ خورشید شاہ نے کہا کہ جب احتجاج پر جائیں گے تو پی ٹی آئی سمیت پوری اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عدلیہ سے ہم نے بہت مار کھائی، وزیراعلیٰ پنجاب نے فون کرکے ہم کو سزائیں دلوائیں۔ قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر نے مزید کہا کہ راحیل شریف اپنی ہسٹری بنانے والے چند جرنیلوں میں شامل ہیں قوم راحیل شریف کی شکرگزار ہے۔