جرمنی میں شاطرشخص نے ری سائیکلنگ مشین کودھوکا دے کر47 لاکھ روپے بٹورلیے

ولون جرمنی: جرمنی کے شہرکولون میں مشروب بنانے والی کمپنی نے عوام میں بوتلوں کو دوبارہ استعمال کا شعور بڑھانے کے لیے ایک ری سائیکلنگ مشین لگائی لیکن ایک چالاک شخص نے بوتل کے بدلے اس سے ہزاروں ڈالر کی رقم بنالی

جرمنی میں شاطرشخص نے ری سائیکلنگ مشین کودھوکا دے کر47 لاکھ روپے بٹورلیے

کولون جرمنیجرمنی کے شہرکولون میں مشروب بنانے والی کمپنی نے عوام میں بوتلوں کو دوبارہ استعمال کا شعور بڑھانے کے لیے ایک ری سائیکلنگ مشین لگائی لیکن ایک چالاک شخص نے بوتل کے بدلے اس سے ہزاروں ڈالر کی رقم بنالی۔

جب آپ ری سائیکل کرنے کے لیے کوئی پلاسٹک یا شیشے کی بوتل مشین کے اندر داخل کرتے ہیں تو وہ اس کے بدلے ایک دو یورو یا کچھ پیسے آپ کو دیتی ہے، زیادہ بوتلیں ہوں تو زیادہ رقم ملتی  ہے۔ لیکن کولون کی عدالت میں ایک شخص کو پیش کیا گیا جس نے مشین کو دھوکا دیا اور ایک بھی بوتل داخل کیے بغیر مشین سے 47 لاکھ روپے کی رقم حاصل کرلی جب کہ دھوکا دہی کے کیس میں مجرم کو 10 ماہ قید کی سزا سنائی گئی۔

ری سائیکلنگ مشین ایک دکان کے نچلے حصے میں رکھی تھی جہاں لوگوں کی آمدورفت کم کم تھی اور اس سے فائدہ اٹھانے والے اس شخص نے 5 ہزار یورو خرچ کرکے مشین میں بنیادی تبدیلیاں کیں۔ اس میں بوتل ڈالنے والے حصے کو کچھ تبدیل کیا اور ہر بار بوتل ڈالنے پر اسے معمولی رقم کی رسید ملتی جسے وہ جمع کرکے اس سے رقم حاصل کرلیتا تھا لیکن اگلے ہی لمحے وہ بوتل واپس نکال لیتا۔ اس نے کل 177,451 مرتبہ مشین میں بوتل ڈالی لیکن اسے ٹوٹنے سے قبل ہی واپس نکال لیا، مشین نے بتایا کہ بوتل اندر پہنچ چکی ہے اس طرح اس نے ایک دو نہیں بلکہ 47 ہزار ڈالر کی رقم بنالی۔

کمپنی کے مطابق وہ اس سے واقف نہیں تھے اور کمپنی کے ایک نمائندے نے شک کے بعد اس دھوکا دہی سے پردہ اٹھایا اور اس شخص پر نظر رکھتے ہوئے اسے گرفتار کیا گیا۔