ٹی 20 ورلڈکپ، آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کو 5 وکٹوں سے شکست دیدی

ٹی 20 ورلڈکپ، آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کو 5 وکٹوں سے شکست دیدی
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

 ابوظہبی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) ٹی 20 ورلڈکپ کے 13 ویں میچ میں آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کو 5 وکٹوں سے شکست دے کر ٹورنامنٹ کی پہلی کامیابی حاصل کر لی ہے۔ 

شیخ زید کرکٹ سٹیڈیم ابوظہبی میں کھیلے گئے میچ میں آسٹریلیا کے کپتان ایرون فنچ نے ٹاس جیت کر جنوبی افریقہ کو بیٹنگ کی دعوت دی جس نے مقررہ 20 اوورز میں9 وکٹوں کے نقصان پر صرف 118 رنز ہی بنائے۔ 

ایڈن مارکرم 36 گیندوں پر ایک چھکے اور تین چوکوں کی مدد سے 40 رنز بنا کر نمایاں بلے باز رہے جبکہ ٹیمبا باووما 12، کوینٹن ڈی کوک 7، ریسی وینڈرڈوسن 2، ہینرچ کلاسن 13، ڈیوڈ ملر 16، ڈوین پریٹوریس 1، کاگیسو ربادا 19 اور اینرچ نورجے 2 رنز بنا سکے۔ 

آسٹریلیا کی جانب سے جوش ہیزل ووڈ سب سے کامیاب باؤلر رہے جنہوں نے 4 اوورز میں 19 رنز کے عوض 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی اور ایڈم زامپا نے 4 اوورز میں 21 رنز کے عوض 2 وکٹیں حاصل کیں جبکہ مچل سٹارک نے 4 اوورز میں 32 رنز ے عوض 2 اور پیٹ کومنز نے 4 اوورز میں 17 رنز کے عوض ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔ 

ہدف کے تعاقب میں آسٹریلین بیٹنگ لائن بھی مشکلات کا شکار رہی اور میچ کا فیصلہ آخری اوور میں ہوا اور کینگروز 5 وکٹوں سے جیتنے میں کامیاب ہو گئے۔ آسٹریلیا کی جانب سے سٹیو سمتھ 34 گیندوں پر 3 چوکوں کی مدد سے 35 رنز بنا کر نمایاں بلے باز رہے جبکہ ڈیوڈ وارنر 14، مچل مارش 11، گلین میکس ویل 18 رنز بنا سکے جبکہ مارکوس سٹوئنس نے ناقابل شکست 24 اور میتھیو ویڈ نے ناقابل شکست 15 رنز بنائے۔ 

جنوبی افریقہ کی جانب سے اینرچ نورجے سب سے کامیاب باؤلر رہے جنہوں نے 4 اوورز میں 21 رنز کے عوض 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ کاگیسو ربادا، کیشو مہاراج اور تبریز شمسی ایک، ایک وکٹ حاصل کر سکے۔ 

واضح رہے کہ میچ کیلئے آسٹریلوی ٹیم کی قیادت ایرون فنچ نے کی جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں ڈیوڈ وارنر، مچل مارش، گلین میکس ویل، سٹیو سمتھ، مارکوس سٹوئنس، میتھیو ویڈ، پیٹ کومنز، مچل سٹارک، ایڈم زامپا اور جوش ہیزل ووڈ شامل تھے۔ 

جنوبی افریقہ کی قیادت ٹیمبا باووما کر رہے تھے جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں کوینٹن ڈی کوک، ایڈن مارکرم، ریسی وینڈرڈوسن، ڈیوڈ ملر، ہینرچ کلاسن، ڈوین پریٹوریس، کیشو مہاراج، کاگیسو ربادا، اینرچ نورجے اور تبریز شمسی شامل تھے۔