پی آئی اے کے لاپتا طیارے کا سراغ مل گیا

پی آئی اے کے لاپتا طیارے کا سراغ مل گیا

لاہور: میڈیا رپورٹس کے مطابق سینیٹ میں لاپتا قرار دیے گئے پی آئی اے کے طیارے کا سراغ مل گیا۔  جرمنی کے عجائب گھر میں کھڑا طیارہ پی آئی اے کے گلے میں پڑ گیاہے۔ جرمن عجائب گھر نہ طیارے کی قیمت ادا کر رہا ہے اور نہ ہی طیارہ واپس کر رہا ہے الٹا پی آئی اے سے طیارے کی پارکنگ فیس کی مد میں لاکھوں روپے بھی طلب کر لیے۔ یہ ایئر بس طیارہ پی آئی اے کا سابق جرمن سی ای او دھوکے سے جرمنی لے گیا تھا۔


سابق مشیر ہوا بازی شجاعت عظیم کی سفارش پر جرمن شہری برنڈ ہلٹن کو پی آئی اے کا انتظامی سربراہ بنایا گیا تھا۔ گزشتہ سال برنڈ ہلٹن نے منصوبہ بندی کے تحت پی آئی اے کا ایئر بس اے 310 طیارہ پہلے مالٹا بھیجا جہاں اسرائیل کی حمایت میں بننے والی فلم کی شوٹنگ اس طیارے پر ہوئی پھر اسے جرمن عجائب گھر کے حوالے کر دیا گیا۔ پی آئی اے کا یہ طیارہ مزید کچھ عرصے پرواز کے قابل تھا۔ ایئر لائن حکام کے مطابق کئی ملین ڈالر مالیت کا طیارہ کوڑیوں کے مول صرف 57 لاکھ روپے میں جرمن عجائب گھر کو بیچا گیا لیکن اب تک نہ تو پی آئی اے کو رقم ملی نہ ہی طیارہ واپس کیا جا رہا ہے۔

موجودہ مشیر ہوا بازی سردار مہتاب عباسی نے انکشاف کیا ہے کہ جرمن عجائب گھر طیارہ واپس کرنے کے بجائے اب الٹا طیارے کی پارکنگ فیس طلب کر رہا ہے۔ حکومت تسلیم کرتی ہے کہ طیارہ غیر قانونی طور پر جرمنی لے جایا گیا لیکن ایف آئی اے میں مقدمے کے اندراج اور ای سی ایل میں نام ہونے کے باوجود حکومت نے پی آئی اے کے سابق سی ای او برنڈ ہلٹن کو نہ صرف اپنے ملک جانے کی اجازت دی بلکہ اس کھیل میں شریک پی آئی اے میں ڈپوٹیشن پر آئے افسران کو بھی ان کے اداروں میں باعزت واپس بھیج دیا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں