سری نگر میں بھارتی فوجی نے خودکشی کرلی

سری نگر میں بھارتی فوجی نے خودکشی کرلی
image by facebook

سری نگر:مقبوضہ کشمیر میں ایک اور بھارتی فوجی نے معصوم کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے مظالم سے تنگ کر اپنی ہی زندگی کا خاتمہ کر لیا۔


تفصیلات کے مطابق سی آر پی ایف کے اسسٹنٹ کمانڈنٹ ایم آروند نے سرکاری رائفل سے خود کو گولی مار لی۔

دنیا بھر کے ماہرین نفسیات ماضی میں کئی مرتبہ اس بات کا اظہار کرچکے ہیں کہ دوران ملازمت جس طرح سے نہتے و بے گناہ مظلوم کشمیریوں کو بہیمانہ تشدد کا ذریعہ بنانے کے لیے بھارت کی قابض افواج کے اہلکاروں کو استعمال کیا جاتا ہے اور جس طرح دوران حراست بزرگوں و جوانوں سمیت بچوں کو قتل کیا جاتا ہے اس کے براہ راست اثرات فوجی اہلکاروں کے اذہان پر مرتب ہورہے ہیں جس کی وجہ سے وہ سخت ذہنی دباؤ کا شکار ہو کر اپنی زندگیوں کا خاتمہ کر لیتے ہیں۔

رواں سال جون میں مقبوضہ وادی چنار میں قابض بھارتی افواج سے تعلق رکھنے والے تین فوجیوں نے خودکشی کرلی تھی ، دو فوجیوں نے خودکشی ڈیوٹی کے دوران کی جب کہ ایک نے بیوی کو گولی مارنے کے بعد خود کشی کا راستہ اپنایا۔

بھارت کے مقبوضہ وادی کشمیر میں تعینات رہنے والے 400 سے زائد فوجیوں نے گزشتہ 12 سال کے دوران خود کشیاں کی ہیں۔ذرائع ابلاغ کے مطابق بھارت کے فوجی اہلکاروں میں دوران ڈیوٹی خود کشی کا رحجان 2007 سے پروان چڑھ رہا ہے۔