بھارتی انجینئرنگ کے طالب علم نےپہلا انسان نما روبوٹ بنالیا

بھارتی انجینئرنگ کے طالب علم نےپہلا انسان نما روبوٹ بنالیا

اسلام آباد:بھارت کے انجینئرنگ کے  ہونہار طالب علم نے ہمت و حوصلے کی مثال قائم کرتے ہوئے ناصرف بھارت کا پہلا انسانی روبوٹ بنانے کا اعزاز  حاصل کیا  بلکہ بھارت کی سب سے پہلی اور بڑی  روبوٹ کمپنی کی بنیاد بھی رکھ دی ۔ ایک تجربہ کے بعد  بھارتی روبوٹک کمپنی گرے اورنج اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کا منبع بن چکی ہے۔


واضع رہے کہ  سمے کوہلی 2008 میں بھارتی طالبعلم انسان نما روبوٹ بنانا چاہتا تھا، استاد کی جانب سے ایسا تجربہ ناممکن قرار دینے کے باوجود سمے کوہلی نے امید نہیں چھوڑی، اپنے ساتھی طالبعلم کی مدد سے نہ صرف بھارت کا پہلا انسان نما روبوٹ بنایا بلکہ بھارت کی سب سے بڑی روبوٹک کمپنی بھی بناڈالی۔

سمے کوہلی کو کوششوں سے شروع ہونے والی روبوٹک کمپنی میں دنیا کی بہترین کمپنیاں سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی لے رہی ہیں ۔