قاتل کو سر عام پھانسی دینی چاہیئے، زینب کے والد کا مطالبہ

قصور: مقتولہ زینب کے والد نے نیو نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا اگر پولیس وقتی طور پر زینب کے اغوا کا سراغ لگا لیتی تو میری بیٹی کی جان بچائی جا سکتی تھی لیکن پولیس نے بچی کو تلاش کرنے میں بہت دیر کر دی تھی۔

شہباز شریف کے ساتھ ہونیوالی گزشتہ روز کی پریس کانفرنس کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا مجھے بولنے کا موقع نہیں دیا گیا تاہم انہوں نے مطالبہ کیا کہ قاتل کو سر عام پھانسی دینی چاہیئے تاکہ ایسے واقعات پھر نہ ہوں اور قصور میں زینب کے نام سے بچوں کیلئے ہسپتال تعمیر کروایا جائے۔ 

زینب کی والدہ نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ملزم کو پانچ دن تک زمین میں گاڑ دیا جائے۔

خیال رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے قصور میں زیادتی کے بعد قتل ہونے والی 7 سالہ بچی زینب انصاری کے والد کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے اس کے قاتل کی گرفتاری کا اعلان کیا تھا۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ملزم محمد عمران کو ڈی این اے ٹیسٹ کے ذریعے 100 فیصد تصدیق کے بعد گرفتار کیا گیا اور پھر تصدیق کے لیے پولی گرافک ٹیسٹ بھی لیا گیا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں