طرابلس: غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق بن غازی کے مرکزی علاقے سلمانی میں واقع مسجد بیعت رضوان کے سامنے عین اس وقت دھماکا ہوا جب لوگوں کی بڑی تعداد نماز کی ادائیگی کے لئے آئی تھی۔ دھماکے کی شدت نسبتاً کم تھی اور اس سے زیادہ جانی نقصان بھی نہیں ہوا۔ ابھی جائے وقوعہ پر امدادی کارکنوں اور سیکیورٹی فورسز پہنچی ہی تھیں کہ وہاں کھڑی ایک گاڑی میں دھماکا ہو گیا۔

یہ دھماکا پہلے کے مقابلے میں زیادہ شدید اور خطرناک تھا جس کی زد میں درجنوں سیکیورٹی اہلکار اور ریسکیو رضاکار آئے۔ سرکاری حکام نے دھماکوں میں 33 افراد کے ہلاک جب کہ 70 سے زائد کے زخمی ہونے کی تصدیق کر دی ہے۔

دھماکوں کے نتیجے میں لیبیا کی انٹیلی جنس ایجنسی کے شعبہ انسداد جاسوسی کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر میدی الفلاح بھی ہلاک ہوگئے ہیں۔

 

 

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں