ووٹ قواعد و ضوابط کے مطابق ڈالنے کیلئے ضروری ہدایات جاری

ووٹ قواعد و ضوابط کے مطابق ڈالنے کیلئے ضروری ہدایات جاری

image by facebook

اسلام آباد:انتخابات 2018 میں بس کچھ گھنٹے باقی ہیں لیکن ووٹنگ کے آغاز سے قبل سب سے اہم بات ووٹ ڈالنے کا طریقہ کار معلوم ہونا ضروری ہے .

یہاں ہم آپ کو ووٹ ڈالنے کے طریقہ کار اور ضروری ہدایات سے متعلق بتائیں گے کہ کس طرح آپ کا ووٹ ضائع ہونے سے بچ سکتا ہے۔

پہلا مرحلہ:

پولنگ افسر آپ کا اصل قومی شناختی کارڈ اور انتخابی فہرست مین درج تفصیلات چیک کرے گا/گی، آپ کا نام اور سلسلہ نمبر بلند آواز سے پولنگ ایجنٹس کو پکارا جائے گا اور انتخابی فہرست سے آپ کا نام کاٹ دیا جائے گا، اس کے بعد آپ کے انگھوٹے کا نشان لیا جائے گا اور آپ کے انگھوٹے کے ناخن کے جوڑ پر انمٹ سیاہی کا نشان لگا دیا جائے گا۔

دوسرا مرحلہ:

مطلوبہ کاؤنٹر فوائلر پر انگھوٹے کے نشانات لگوانے کے بعد قومی اور صوبائی اسمبلی کے اسسٹنٹ پریزائڈنگ افسران بیلٹ پیپرز کی پشت پر دستخط اور مہر ثبت کرنے کے بعد بیلٹ پیپر برائے قومی اسمبلی ( سبز رنگ ) اور بیلٹ پیپر برائے صوبائی اسمبلی ( سفید رنگ ) جاری کریں گے۔
 

تیسرا مرحلہ:

اس کے بعد آپ ووٹنگ اسکرین کے پیچھے جائیں اور اپنے بیلٹ پیپرز پر اپنی پسند کے کسی ایک امیدوار کے انتخابی نشان پر درست طریقے سے مہر لگائیں۔
 

چوتھا مرحلہ :

سبز رنگ کا بیلٹ پیپرسبز ڈھکن والے بیلٹ باکس اور سفید رنگ کا بیلٹ پیپر سفید ڈھکن والے بیلٹ باکس میں ڈالیں۔

ضروری ہدایات:

اپنا اصل قومی شناختی کارڈ ہمراہ لائیں، زائد المعیاد قومی شناختی کارڈ بھی قابل قبول ہوگا، فوٹوکاپی قابل قبول نہیں ہوگی، قومی شناختی کارڈ کے علاوہ کوئی اور دستاویز قابل قبول نہیں ہوگی ، مریضوں، حاملہ خواتین، معذور افراد، بزرگ شہریوں اور خواجہ سراؤں کو پولنگ کے عمل میں ترجیح دی جائے گی۔


 

ووٹ کی رازداری کا ہر حال میں خیال رکھیں، پولنگ اسٹیشن کے اندر موبائل فون اور کیمرہ لانے کی اجازت نہیں ہے ، ووٹنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوگا اور شام 6 بجے ختم ہوجائے گا ، پولنگ کے مقررہ وقت کے اختتام کے بعد بھی پولنگ اسٹیشن کی حدود میں موجود ووٹرز اپنا ووٹ ڈال سکتے ہیں۔