طیاروں کی کمی، پی آئی اے کا فضائی آپریشن متاثرہونے کا خدشہ

طیاروں کی کمی، پی آئی اے کا فضائی آپریشن متاثرہونے کا خدشہ

کراچی: طیاروں کی کمی کے باعث پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن کاآئندہ ماہ سے فضائی آپریشن متاثر ہونے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے۔نجی ٹی وی نے پی آئی اے کے افسر کے حوالے سے بتایا کہ پی آئی اے کے بیرون چلے جانے والے جرمن سی ای او نے 6 ماہ قبل ترکی سے 4طیارے ویٹ لیزپرحاصل کیے تھے ان طیاروںکوپی آئی اے کے فضائی آپریشن میں استعمال کیا گیاتھاتاہم یکم جون کویہ طیارے ترکی کوواپس کردئیے جائیں گے۔


پی آئی اے ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت فضائی بیٹرے میں 32 طیارے شامل ہیں۔ان میں سے تین سے چار طیارے چیکنگ کے مراحل میںرہتے ہیں،پی آئی اے انتظامیہ کو طیاروں کی کمی کاسامناہے،ذرائع نے بتایا کہ پی آئی اے کے چیف حج کوآرڈینٹر انور عادل نے بھی اپنے عہدے سے استعفٰٰی دیدیا اور حج کوآرڈینٹر مقرر ہونے سے معذرت کرلی، اس وقت پی آئی اے انتظامیہ طیاروں کی کمی اور طیاروں سے ہیرون برآمدہونے کے واقعات کی وجہ سے شدید دبا وکا شکار ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source