امریکہ سے 100 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری

امریکہ سے 100 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری

اسلام آباد : امریکا سے سرمایہ کاروں کا ایک بڑا وفد پاکستان میں سیاحت کے شعبے میں 100 ملین ڈالرکی سرمایہ کاری کرنے کیلئے پاکستان پہنچ گیا۔


تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے دورہ امریکا کے مثبت اثرات آنا شروع ہوگئے اور وزیراعظم کی دورہ امریکا میں بزنس کمیونٹی سے ہوئی ملاقاتیں کام کر گئیں، امریکا سے سرمایہ کاروں کا وفد پاکستان پہنچ گیا ہے ، وفد پاکستان میں سیاحت کے شعبے میں 100 ملین ڈالرکی سرمایہ کاری کا اعلان کرے گا، امریکی وفد نے وفاقی وزیر امور کشمیر گلگت بلتستان علی امین گنڈاپورسے ملاقات کی ، ملاقات میں اسکردو سمیت گلگت بلتستان کے مختلف علاقوں میں سیاحتی مراکز قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا، وفاقی وزیرعلی امین گنڈاپور کی جانب سرمایہ کاری کے ممکنہ مواقع پر بریفنگ بھی دی گئی۔

علی امین گنڈا پور نے کہا کہ گلگت بلتستان 72 سال سے ٹیکس فری زون ہے، چین کے قریب ہونے سے برآمدی کاسٹ انتہائی کم ہے، وفاقی حکومت نے سکردو ایئرپورٹ کو عالمی طرز پر قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، گلگت بلتستان میں فری میڈوز‘ صحرا‘ دریا‘ ہریالی اور وائلڈ لائف سمیت سب کچھ دستیاب ہے پرکشش مقام ہونے کے باعث عوام کی بڑی تعداد وہاں جانے کی خواہشمند ہے۔ گلگت بلتستان کو آزاد کشمیر سے ملانے کیلئے ایشین بنک کے تعاون سے ایک شاہراہ تعمیر کریں گے۔ گلگت بلتستان میں غیر ملکی سیاحوں کیلئے این او سی کی شرط بھی ختم کر دی ہے۔

امریکی وفد نے کہا ہے کہ سرمایہ کاری کا فیصلہ عمران خان، ٹرمپ کی ملاقاتوں کے بعد کیا، موجودہ حکومت پر مکمل اعتماد ہے اس لیے سرمایہ کاری کر رہے ہیں، شمالی علاقہ جات اسکردو، چترال میں سیاحت اور ہوٹلنگ انڈسٹری میں سرمایہ ہو گی، کچھ دنوں سے پاکستان گھوم رہے ہیں یہ بہت خوبصورت ہے، پاکستان کیساتھ مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے کیلئے سنجیدہ ہیں، جتنا پاکستان کو دیکھ رہے ہیں اتنا زیادہ پسند آ رہا ہے، پاکستان خوبصورت ہے یہاں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع ہیں ، ابتدائی طور پر ہم 100 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے جا رہے ہیں۔