سعودی عرب پاکستانی محنت کشوں کے اقامہ میں توسیع کرے، زلفی بخاری کی درخواست

سعودی عرب پاکستانی محنت کشوں کے اقامہ میں توسیع کرے، زلفی بخاری کی درخواست

اسلام آباد: بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے بارے میں وزیراعظم کے معاون خصوصی سید ذوالفقار عباس بخاری نے سعودی عرب سے پروازوں میں اضافہ اور پاکستانی محنت کشوں کے اقامہ میں توسیع کرنے کا کہا ہے۔


سعودی عرب کے نائب وزیر محنت عبداللہ بن نصر ابوثانی کے ساتھ ایک آن لائن ملاقات میں معاون خصوصی نے اقامے کی تاریخ میں 30 اکتوبر تک توسیع کرنے کا کہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پروازوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے بھی پروازوں کے کرائے میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔

اس موقع پر سعودی عرب کے نائب وزیر محنت عبداللہ بن نصر ابوثانی نے پروازوں اور ویزوں کے معاملے کو وزراء کی سطح کے ہفتہ وار اجلاس میں اٹھانے کا وعدہ کیا۔

سعودی نائب وزیر برائے انسانی وسائل نے کہا کہ اقاموں کی میعاد بڑھانے کا فیصلہ کیا جائے گا اور آئندہ ماہ لیبر قوانین میں ترمیم کی ایک بڑی خوش خبری دیں گے۔

دونوں رہنمائوں کے درمیان سعودی عرب جانے والے مسافروں کو ٹکٹ کے حصول میں مشکلات، محدود پروازوں کی وجہ سے نشستوں کی عدم دستیابی اور کرایوں میں اضافے کے سلسلے میں بات چیت ہوئی۔

زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ پروازوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے کرایوں میں اضافہ ہوا، کارکنوں کا بہت دباؤ ہے جو واپس سعودی عرب جانا چاہتے ہیں، لیکن پروازوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے ورکرز پھنس چکے ہیں، اس لیے سعودی ایئر کیریئر اور پی آئی اے کو پروازیں بڑھانے دیں۔

زلفی بخاری نے درخواست کی کہ اقامے کی مدت میں کم از کم ایک ماہ کی توسیع کی جائے، جس پر سعودی نائب وزیر عبداللہ بن نصیر نے وزارتی اجلاس میں پروازوں اور اقاموں کا معاملہ اٹھانے کا وعدہ کیا۔

انھوں نے کہا کہ وزارت تجارت، داخلہ اور انسانی وسائل کے اجلاس میں یہ معاملہ اٹھاؤں گا، 25 فی صد نشستیں خالی چھوڑنے کی وجہ سے پروازوں پر بوجھ ہے، جلد تمام نشستوں پر مسافروں کو آنے کی اجازت ہوگی۔

سعودی نائب وزیر نے کہا ریکارڈ کا جائزہ لے کر اقاموں کی میعاد بڑھانے کا فیصلہ کریں گے، آئندہ ماہ لیبر لا میں ترمیم کی ایک بڑی خوش خبری بھی دیں گے۔