سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ شائع نہ کرنے پر پنجاب حکومت سے جواب طلب

سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ شائع نہ کرنے پر پنجاب حکومت سے جواب طلب

لاہور: سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ شائع نہ کرنے پر سانحہ کے متاثرین نے لاہورہائیکورٹ میں درخواست دائر کر رکھی ہے جس کی سماعت آج جسٹس مظاہر علی نقوی نے کی۔ جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ پنجاب حکومت نے واقعے کی تحقیقات کے لیے عدالتی کمیشن تشکیل دیا تھا تاہم جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ اب تک منظر عام پر نہیں آسکی ہے۔

عدالت نے درخواست گزاروں کے مؤقف پر کہا ہے بتایا جائے سانحے کی رپورٹ شائع کیوں نہیں کی جا رہی۔ ہائیکورٹ نے پنجاب حکومت سے جواب طلب کرتے ہوئے 12 ستمبر کے لیے نوٹس جاری کر دیا۔ یاد رہے 17  جون 2014 کو لاہور کے علاقے ماڈل ٹاؤن میں پولیس اور عوامی تحریک کے کارکنان کے درمیان تصادم ہوا تھا جس کے نتیجے میں پاکستان عوامی تحریک کے 14 کارکن جاں بحق اور متعدد زخمی ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری بھی کئی بار رپورٹ منظر عام پر لانے کا مطالبہ کر چکے ہیں جب کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن پر انہوں نے اسلام آباد کے ڈی چوک پر دھرنا بھی دیا تھا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں