اے ٹی سی کے بعد سیشن کورٹ سے بھی عمران خان کی ضمانت منظور

اے ٹی سی کے بعد سیشن کورٹ سے بھی عمران خان کی ضمانت منظور

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کی پولیس افسران اور خاتون جج کو دھمکیوں پر درج کئے گئے دفعہ 144 کے مقدمے میں بھی ضمانت منظور ہو گئی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان انسداد دہشت گردی کی عدالت سے ضمانت کے بعد دفعہ 144 کی خلاف ورزی کے کیس میں ضمانت کیلئے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد پہنچے۔ 

عمران خان کی ایف ایٹ کچہری آمد کے موقع پر سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے اور کسی بھی غیر متعلقہ شخص کو کچہری میں جانے کی اجازت نہیں تھی۔

ایڈیشنل سیشن جج طاہر عباس سپرا نے عمران خان کی درخواست ضمانت پر سماعت کی اور دفعہ 144 کی خلاف ورزی کے مقدمے میں 7 ستمبر تک ان کی ضمانت منظور کر لی۔ 

عدالت کی جانب سے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو ضمانت کیلئے 5 ہزار روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا جبکہ پولیس کو بھی 7 ستمبر کو مقدمے کے ریکارڈ سمیت طلب کر لیا ہے۔

واضح رہے کہ اسلام آباد میں دفعہ 144 نافذ ہونے کے باوجود چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے شہباز گل کی حمایت میں احتجاجی جلسہ کیا تھا جس پر عمران خان سمیت پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

مصنف کے بارے میں