مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس اہلکاروں کی دوسری شادی پر پابندی

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس اہلکاروں کی دوسری شادی پر پابندی

سرینگر : بھارت کے زیر تسلط مقبوضہ کشمیر میں محکمہ پولیس نے ایک باقاعدہ حکم جاری کرکے اپنے عہدے داروں اور اہل کاروں کی دوسری شادی پر پابندی لگا دی ہے۔حکم نامے میں کہا گیا ہے اگر کسی پولیس اہل کار کے لیے دوسری شادی کرنا ناگزیر ہو جاتا ہے تو بھی اسے پیشگی اجازت حاصل کرنا ہوگی۔


اجازت کے بغیر دوسری شادی قابل سزا جرم ہوگی اور مرتکب اہل کاروں کی ایک سال کی ترقی روک دی جائے گی اور اس کی سروس بک میں اس کا اندراج کیا جائے گا۔وائس آف امریکا کے مطابق حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ یہ دیکھا گیا ہے کہ پولیس کے عہدے داروں اور اہل کاروں میں ملازمت کے قواعد اور ضابطہ اخلاق کی صریحاً خلاف ورزی کر کے دوسری شادی کے رجحان میں اضافہ ہوگیا ہے جس سے کئی سماجی مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔

خاص طور پر ان کی پہلی بیویوں اور ان کی اولاد کے لیے پریشانیاں پیدا ہو جاتی ہیں ۔حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ طے شدہ طریقہ کار کو نظر انداز کر کے دوسری شادی کرنا پولیس کے ڈسپلن کی سنگین خلاف ورزی ہے۔ جو مرتکب افراد کے خلاف محکمانہ کارروائی کا تقاضا کرتی ہے۔پولیس کے محکمے نے ریاستی حکومت کو یہ تجویز پیش کی ہے کہ پیشگی اجازت کے بغیر شادی کرنے والوں کے خلاف ایک سال کی ترقی روکنے سمیت سخت کارروائی کی جائے۔