دیر تک سونے والے کو ماہرین نے ذہنی مریض قرار دے دیا !

نیویارک : طبی ماہرین نے اپنی نئی تحقیق میں اس بات کا اندازہ لگایا ہے کہ دیر تک سونے والے افراد میں ذہنی بیماریاں زیادہ پیدا ہوتی ہیں اور وہ جلد ذہنی مرض میں مبتلا ہوتے ہیں۔

دیر تک سونے والے کو ماہرین نے ذہنی مریض قرار دے دیا !

نیویارک : طبی ماہرین نے اپنی نئی تحقیق میں اس بات کا اندازہ لگایا ہے کہ دیر تک سونے والے افراد میں ذہنی بیماریاں زیادہ پیدا ہوتی ہیں اور وہ جلد ذہنی مرض میں مبتلا ہوتے ہیں۔ امریکی ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ زیادہ دیر تک سونے سے دماغی امراض لاحق ہو سکتے ہیں۔ ماہرین کے مطابق زیادہ دیر سونے سے ڈیمنشیا اور الزائیمر جیسے دماغی امراض لاحق ہو سکتے ہیں۔


 

بوسٹن یونیورسٹی سکول آف میڈیسن (بی یو ایس ایم) کی ڈاکٹر سدھا ششادری اور ان کے ساتھیوں کی جانب سے کئے گئے سروے میں 30 سے 62 سال کے 5 افراد کا جائزہ لیا گیا جس میں ان کی نیند کے بارے میں بھی سوالات کئے گئے اور 10 سال تک تمام لوگوں کو دیکھا گیا کہ ان میں الزائیمر یا ڈیمنشیا کی دیگر اقسام لاحق ہوئی یا نہیں۔ دس سال بعد ٹیم پر انکشاف ہوا کہ جو لوگ روزانہ 9 گھنٹے سے زیادہ وقت کے لیے سوتے ہیں وہ اگلے 9 سے 10 برس میں بقیہ کے مقابلے میں الزائیمر کے زیادہ شکار ہوئے یعنی ان میں دوگنا خطرہ بڑھ گیا۔

مطالعے سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ جو لوگ معمول سے زیادہ سوتے ہیں ان کے دماغ کا حجم بقیہ کے مقابلے میں تھوڑا کم ہوتا ہے لیکن ضروری نہیں کہ اسی وجہ سے الزائیمر اور ڈیمنشیا لاحق ہوتے ہوں۔