پی ایس ایل کے پانچویں میچ میں لاہور قلندرز کو ایک اور شکست،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز9 وکٹوں سے فاتح

دبئی :پاکستان سپر لیگ تھری کے ایک اور میچ میں لاہور قلندرز کو عبرتناک شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

تفصیلات کے مطابق دبئی میں جاری پی ایس ایل کے پانچویں میچ میں لاہور قلندرز ایک مرتبہ پھر کامیابی حاصل کرنے میں ناکام رہی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے ہاتھوں 9 وکٹوں کی شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ میچ میں لاہور قلندرز کے 120 رنز کا ہدف فاتح ٹیم نے با آسانی ایک وکٹ کے نقصان پر حاصل کرلیا۔

قبل ازیں لاہور قلندرز نے اننگز کے آغاز پرجارحانہ بلے بازی کا مظاہرہ کیا تاہم ساتھ میں وکٹیں بھی گنواتے رہے۔قلندرز کو پہلا نقصان چوتھے اوور زمیں ہوا جب سنیل نارائن 10 گیندوں پر 28 رنز بنا کر راحت علی کی گیند پر انور علی کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوئے۔دوسرےآﺅٹ ہونے والے کھلاڑی فخر زمان تھے جو ایک رن بنا کر جوفرا آرچر کی گیند پر ان ہی کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوئے۔

تیسرا نقصان بھی 60 کے مجموعی سکور پر اس وقت ہوا جب برینڈن میک کولم30 رنز بنا کر محمد نواز کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ ہوئے۔کیمرون ڈیلپورٹ بھی دو چھکوں کی مددسے 8 گیندوں پر 15 رنز بنا کر محمد نواز کی گیند پر انور علی کے ہاتھوں کیچ آئوٹ ہوئے۔اگلے ہی اوور میں حسان خان نے عمر اکمل کو ایک رن پر ایل بی ڈبلیو کر دیا۔رضا حسن اور گلریز صدف بھی سکور میں خاطر خواہ اضافہ نہ کرسکے اور بالترتیب 4 اور 13 رنز بناکر پویلین لوٹ گئے۔


لیگ سپنر یاسر شاہ نے شین واٹسن کی گیند گراﺅنڈ سے باہر پھینکنے کی کوشش کی تاہم صرف وکٹ کیپر سرفراز احمد کو کیچ دے پائے۔ اختتامی بلے باز بھی سکور میں کوئی خاطر خواہ اضافہ نہ کرپائے اور لاہور قلندرز اپنے مقررہ اوورز میں صرف 119 رنز ہی بناسکی۔جواب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے شین واٹسن اور اسد شفیق کے دوران 92 رنز کی شراکت قائم ہوئی جس کے بعد آسٹریلوی آل راﺅنڈر سنیل نارائن کی گیند پر آﺅٹ ہوگئے۔

عمر امین نے اسد شفیق کو کریز پر جوائن کیا تاہم اس وقت تک کوئٹہ گلیڈی ایٹرز میچ پر پوری طرح حاوی ہوچکے تھے۔اسد شفیق نے شاندار بلے بازی کا سلسلہ جاری رکھا اور کوئٹہ کو فتح سے ہمکنار کروایا۔کوئٹہ کی جانب سے چار رنز کے عوض چار وکٹیں لینے والے محمد نواز کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔