امید ہے ٹرمپ کشمیر کے مسئلے پر مودی سے بات کریں گے، شاہ محمود

امید ہے ٹرمپ کشمیر کے مسئلے پر مودی سے بات کریں گے، شاہ محمود
امریکی صدر کو تشویش ہے کہ مسئلہ کشمیر پر دو ایٹمی قوتیں آمنے سامنے ہیں، شاہ محمود۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: شاہ محمود قریشی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ٹرمپ کیلئے بھارت سے مسئلہ کشمیر اٹھانے کا سنہری موقع ہے اور امید ہے وہ نریندر مودی سے دیرینہ مسئلے پر بات کریں گے۔ مقبوضہ وادی میں صورتحال خوفناک، بھارت زیادہ دیر تک کشمیریوں کی آواز نہیں دبا سکتا۔


انہوں نے کہا کہ بھارت اور پاکستان میں امن و استحکام کشمیر کے حل سے ممکن ہے، خطے کے امن و استحکام میں پاکستان کے کردار کو دنیا سراہا رہی ہے لہٰذا بھارت خطے میں امن کے فروغ کے لیے ہاتھ بڑھائے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ امریکی صدر کو تشویش ہے کہ مسئلہ کشمیر پر دو ایٹمی قوتیں آمنے سامنے ہیں، ٹرمپ سمجھتے ہیں کہ دونوں ممالک میں کوئی بھی تنازع پوری دنیا کو متاثر کر سکتا ہے۔

دوسری جانب اقوام متحدہ میں مستقل مندوب منیر اکرم نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی جس میں خطے کے معاملات، کشمیر کی صوتحال اور افغان مفاہمتی عمل پر تفصیلی گفتگو کی گئی۔ منیر اکرم نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے حالیہ دورہ پاکستان کی کامیابی پر وزیرخارجہ کو مبارک دی۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا 7 سال کے بعد سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کا دورہ پاکستان اقوام عالم کے اعتماد کا مظہر ہے، مسئلہ کشمیر پر سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کی جانب سے مصالحت کی پیشکش خوش آئند ہے۔