70سالہ شخص کا بیوی سے لڑائی کے بعد بینک میں ڈاکہ

70سالہ شخص کا بیوی سے لڑائی کے بعد بینک میں ڈاکہ

نیویارک :امریکا کی ریاست کنساس میں ایک 70سالہ بوڑھے شخص پر ڈاکہ مارنے کا جرم ثابت ہو گیا ہے اور وہ بھی ایک بینک لوٹی گئی۔اس بوڑھے شخص نے اپنی بیوی سے تنگ آکر اور اس جان چھڑانے کے لیے بینک میں ڈاکہ ڈالا۔لارنس ریپل نامی شخص نے گذشتہ ستمبر میں کنساس کی ریاست میں واقع ایک بینک میں ڈاکہ ڈالا،ڈاکہ ڈالنے کے بعد یہ بوڑھا ڈاکو بینک سے باہر نہیں گیا اور پولیس کے آنے کا نتظار کرتا رہا۔


لارنس ریپل نے پولیس اہلکاروں کو بتایا تھا کہ وہ گھر میں رہنے کے برعکس جیل میں رہنے کو ترجیح دیں گے۔

انھیں الزام ثابت ہونے پر 20 برس تک قید کی سزا ہو گی۔ان کی اہلیہ عدالت میں موجود تھیں لیکن انھوں نے کوئی بیان نہیں دیا۔عدالتی دستاویزات کے مطابق لارنس ریپل نے بینک کے کلرک کو ایک نوٹ دیا جس پر رقم دینے کے مطالبے کے ساتھ لکھا کہ ان کے پاس بندوق بھی ہی۔ اس ڈاکو کو بینک کی طرف سے تین ہزار ڈالر کے قریب رقم دی گئی لیکن وہ بینک سے گئے نہیں اور لابی میں ہی کرسی پر بیٹھ گئے اور گارڈ سے کہا کہ' میں وہ شخص ہوں جس کی آپ کو تلاش ہے۔

اس نئے نویلے ڈاکو نے ڈاکے کے لیے ایک ایسے بینک کا انتخاب کیا تھا جو پولیس سٹیشن کے قریب ہی واقعہ تھاپولیس کے مطابق اس واقعے سے ایک دن پہلے ہی لارنس ریپل کا اپنی بیوی کے ساتھ جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد وہ خاصا پریشان بھی تھا