مودی سرکار نے 3500 مساجد کو شہید کرنے کا ناپاک منصوبہ بنا لیا

The Modi government made an unholy plan to martyr 3500 mosques
کیپشن:   فائل فوٹو

نئی دہلی: ہندوستان کی انتہا پسند حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے ملک بھر میں موجود 3500 مساجد کو اپنے نشانے پر رکھتے ہوئے ان کو   شہید کرنے کا ناپاک منصوبہ بنا لیا۔

اس بات کا انکشاف بھارت کے سرکردہ اور معروف سیاستدان بدرالدین اجمل کی جانب سے کیا گیا ہے۔ انہوں نے چونکا دینے والا انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ مودی سرکار نے ملک بھر میں موجود 3500 مساجد کو شہید کرنے کا ناکام منصوبہ بنا لیا ہے۔ خیال رہے کہ بدرالدین اجمل کا تعلق انڈین ریاست آسام سے ہے اور وہ رکن اسمبلی بھی ہیں۔

خیال رہے کہ آئندہ چند ماہ میں ریاست آسام میں الیکشن ہونا ہیں، اس لئے بھارتیہ جنتا پارٹی کی حریف جماعتوں کی جانب سے تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے کہ کہیں اپنے ہندو ووٹرز کو راغب کرنے کیلئے مودی سرکار مساجد کو شہید کرنے کے ناپاک منصوبے پر عمل درآمد نہ کردے کیونکہ ماضی میں اس کی تاریخ رہی ہے کہ الیکشن کے مواقع پر کوئی نہ کوئی سماجی بگاڑ پیدا کر دیا جائے۔

گزشتہ دنوں بھی ہندو بلوائیوں نے ایک مسجد پر قبضہ کرتے ہوئے اس کے دروازوں کو آگ لگا دی تھی جبکہ اس پر بھگوا رنگ کرتے ہوئے مینار کو بھی شہید کر دیا گیا تھا۔ پولیس نے نہ تو اس واقعے کی ایف آئی آر کاٹی اور نہ ہی کسی کو گرفتار کیا۔

اس کے علاوہ ایک اور واقعہ انڈیا کے معروف شہر حیدر آباد میں پیش آیا تھا جہاں دو تاریخی مسجدوں کو شہید کر دیا گیا تھا۔ 

ہندوستانی ریاست ہریانہ میں 1667ء میں تعمیر کی گئی تاریخی مسجد کو بھی کچھ عرصۃ قبل گردوارے میں تبدیل کرنے کا واقعہ پیش آیا تھا۔ آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے ان واقعات کی پرزور مذمت کرتے ہوئے مسلمان کمیونٹی کیخلاف انتہائی قدم قرار دیا ہے۔