حمزہ شہباز نے فل کورٹ بنانے کی درخواست سپریم کورٹ میں دائر کر دی

حمزہ شہباز نے فل کورٹ بنانے کی درخواست سپریم کورٹ میں دائر کر دی

اسلام آباد: وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز شریف نے فل کورٹ بنانے کی درخواست سپریم کورٹ میں دائر کرتے ہوئے آرٹیکل 63 اے کی نظر ثانی کی درخواستیں بھی ساتھ سماعت کرنے کی استدعا کر دی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق حمزہ شہباز شریف نے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے خلاف منحرف ارکان کی اپیلیں بھی رولنگ کیس کے ساتھ سننے کی استدعا کرتے ہوئے کہا ہے کہ منحرف ارکان کے الیکشن کمیشن فیصلے کے خلاف اپیلیں زیر التواءہیں۔ 

درخواست میں کہا گیا ہے کہ ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری کی 22 جولائی کو دی گئی رولنگ درست ہے، الیکشن کمیشن نے منحرف ارکان کے خلاف عمران خان کی جانب سے جاری کی گئی ہدایات کو تسلیم کیا۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سپریم کورٹ میں منحرف ارکان کی اپیلیں منظور ہو گئیں تو صورتحال یکسر تبدیل ہو جائے گی اور 25 منحرف ارکان کے نکالے گئے ووٹ بھی گنتی میں شمار ہوں گے۔ 

درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن نے منحرف ارکان کے خلاف عمران خان کی ہدایات کے خط کو درست قرار دیا، لہٰذا چوہدری شجاعت حسین کا اپنے ایم پی ایز کو لکھا گیا خط بھی آئین اور قانون کے مطابق درست ہے۔

علاوہ ازیں پیپلز پارٹی ، جمیعت علمائے اسلام (ف) اور چوہدری شجاعت حسین نے وزیراعلیٰ پنجاب کیس میں فریق بننے کی درخواست دائر کرتے ہوئے فل کورٹ تشکیل دینے کی استدعا کر دی ہے۔ 

مصنف کے بارے میں