آئی سی سی قوانین میں تبدیلی،اب امپائرز جھگڑا لو کھلاڑیوں کو میدان بدر کرسکیں گے

آئی سی سی قوانین میں تبدیلی،اب امپائرز جھگڑا لو کھلاڑیوں کو میدان بدر کرسکیں گے

لندن: جھگڑا لو کھلاڑی ہو جائیں خبر دارکیونکہ امپائرز جھگڑا لو کھلاڑیوں کو میدان سے باہر بھیج سکتے ہیں۔جی ہاں  آئی سی سی نے انٹرنیشنل کرکٹ میں نئے قوانین کی منظوری دے دی۔  فٹ بال کی طرح اب امپائرز کرکٹ میں بھی دوران میچ جھگڑا کرنے والے کھلاڑیوں کو میدان سے باہر بھیج سکیں گے۔


آئی سی سی چیف ایگزیکٹیو کمیٹی کا اجلاس ڈیوڈ رچررڈسن کی سربراہی میں لندن میں منعقد ہوا ،جس میں امپائرز کو دوران میچ جھگڑا کرنے والے کھلاڑیوں کو میدان سے باہر بھیجنے کا اختیار دے دیا گیا ۔امپائر کال پر ایل بی ڈبلیو ریویو ضائع نہیں ہو گا، ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز میں بھی ڈی آر ایس کے نفاذ کی منظوری دی گئی ہے۔

آئی سی سی کے ان نئے قوانین کا اطلاق رواں برس یکم اکتوبر سے ہو گا۔

آئی سی سی کی ورلڈ گورننگ باڈی کا سالانہ جنرل اجلاس لندن میں ہوا جہاں نئے قوانین کی باقاعدہ منظوری دے دی گئی۔ نئے قوانین میں ٹی ٹوئنٹی میچوں میں بھی ڈی آر ایس کے نفاذ کی منظوری دے دی گئی ہے جبکہ امپائرز کو یہ اختیار مل گیا ہے کہ وہ دوران میچ جھگڑنیوالے کھلاڑیوں کو میدان بدر کر سکیں گے تاہم دیگر واقعات پر موجودہ قوانین کے تحت ہی سزا دی جائے گی۔ ٹی ٹوئنٹی سمیت تمام بین الاقوامی میچوں میں ڈی آر ایس کے نفاذ کی بھی منظوری دی گئی ہے جس کے بعد اب ٹیسٹ کرکٹ میں 80 اوورز کے بعد نئے ریویو ملنا بند ہو جائیں گے۔ آئی سی سی نے بلا اور گیند کے توازن کو برقرار رکھنے کے لیے بلے کے سائز کی حد مقرر کرنے کا بھی فیصلہ کر لیا ہے۔

بلے باز کی جانب سے ایک بار کریز کے پار بلا رکھنے یا جسم کا کوئی بھی حصہ پہنچنے کے بعد رن مکمل تصور کیا جائے گا۔ خیال رہے کہ رواں سال کے آغاز میں کرکٹ کے قوانین میں تبدیلی کے لیے تجاویز آئی سی سی کو پیش کی گئی تھیں۔ آئی سی سی کی جانب سے منظوری کے بعد اب ان نئے قوانین کا اطلاق یکم اکتوبر سے ہو گا۔

نیوویب ڈیسک< News Source